ششی کپور نے فلم انڈسٹری میں رومانوی ہیرو کی حیثیت سے شناخت قائم کی

Updated: December 04, 2021, 12:28 PM IST | Agency | Mumbai

مشہور اداکار ششی کپور کا نام ایک ایسے اداکارکے طورپر لیا جائے گا جنہوں نے اپنی رومانوی اداکاری سے تقریباً۳؍ دہائی تک شائقین کی بھرپور تفریح کی۔

Shashi Kapoor`s smile was very beautiful.Picture:INN
ششی کپور کی مسکراہٹ بہت خوبصورت تھی۔ تصویر: آئی این این

 مشہور اداکار ششی کپور کا نام ایک ایسے اداکارکے طورپر لیا جائے گا جنہوں نے اپنی رومانوی اداکاری سے تقریباً۳؍ دہائی تک شائقین کی بھرپور تفریح کی۔ ۱۸؍مارچ۱۹۳۸ء کو پیدا ہونےوالے ششی کپور کا حقیقی نام بلبیر راج کپور تھا ۔ان کا رجحان بچپن سے ہی فلموں کی جانب تھا  اور وہ اداکار بننا چاہتے تھے۔ان کے والد اور مشہور و مقبول اداکار پرتھوی راج کپور  اور بھائی راج کپور  اور  شمی کپور  فلم انڈسٹری کے مشہور اداکار تھے۔ان کے والد اگر چاہتے تو وہ انہیں لے کر فلم بناسکتے تھے لیکن ان کا خیال تھا کہ ششی جدوجہد کریں اور اپنی محنت سے اداکار بنیں۔ششی کپور  نے اپنے طویل کریئر  کی شروعات  بچپن میں ہی کرلی تھی۔ ۴۰ء  کی دہائی میں انہوں نے کئی فلموں میں بطور چائلڈ ایکٹر کام کیا۔ان میں ۱۹۴۸ء میں ریلیز ہوئی فلم آگ اور۱۹۵۱ء میں آوارہ شامل ہیں جن میں انہوں نے راج کپور کے بچپن کا کردار ادا کیا تھا۔۵۰ء کی دہائی میں ششی اپنے والد کے تھیٹر  سے وابستہ ہوگئے۔اسی دوران ہندوستان اور شمالی ایشیا  کے سفر پر آئے برطانوی ڈرامہ گروپ شیکسپیئر  سے وہ وابستہ ہوگئے جہاں ان کی ملاقات  گروپ کے کنوینر کی صاحبزادی  جینیفر کیڈل سے ہوئی۔وہ ان سے محبت کربیٹھے اور بعد میں انہی سے شادی کرلی۔  ششی کپور نے اداکار کے طورپر باقاعدہ شروعات ۱۹۶۱ء میں یش چوپڑا کی فلم دھرم پتر سے کی۔اس کے بعد انہیں ومل رائے کی فلم پریم پتر میں بھی کام کرنے کا موقع ملا لیکن  بدقسمتی سے دونوں ہی فلمیں ناکام ثابت ہوئیں۔ اس کے بعد ششی کپور نے مہندی لگی میرے ہاتھ ،ہولی ڈے ان بامبے اور بے نظیر نامی فلموں میں بھی کام کیا لیکن یہ سبھی فلمیں کچھ خاص کمال نہیں دکھا سکیں۔۱۹۶۵ءمیں ششی کپور  کے کریئر نے اہم موڑ لیا۔اس سال ان کی فلم جب جب پھول کھلےریلیز ہوئی۔ بہترین نغموں، موسیقی اور اداکاری سے آراستہ اس فلم کی زبردست کامیابی نے ششی کپور  کے کریئر کو ایک نئی سمت دی۔ ۱۹۶۵ءمیں ہی ششی کپور  کے کریئر کی ایک اور بہترین فلم وقت ریلیز ہوئی۔اس فلم میں ان کے سامنے بلراج ساہنی ،راج کمار اور سنیل دت جیسے مشہور اور بہترین اداکار تھے۔اس کے باوجود اپنی اداکاری سے شائقین کی توجہ اپنی طرف مبذول کروانے میں وہ کامیاب رہے۔یہ فلم اس وقت کی بہترین اور سپر ہٹ فلموں میں شمار کی جاتی ہے۔ ان فلموں کی کامیابی کے بعد ششی کپور  کی شبیہ رومانوی ہیرو کی بن گئی اور فلمسازاور ہدایت کاروں نے بیشتر فلموں میں ان کی اسی شبیہ کو بھنایا۔ ۱۹۶۵ءسے ۱۹۷۶ءکے درمیان کامیابی کے سنہرے  دور میں ششی کپور نے جن فلموں میں کام کیا ان میں زیادہ تر ہٹ ثابت ہوئیں۔۸۰ء کی دہائی میں ششی کپور نے فلم پروڈکشن  کے میدان میں بھی قدم رکھا اور فلم جنون بنائی۔اس کے بعد انہوں نے کلیوگ، ۳۶؍چورنگی لین، وجیتا، اُتسو وغیرہ فلمیں بھی بنائیں حالانکہ یہ فلم باکس آفس پر زیادہ کامیاب نہیں ہوئیں لیکن ان فلموں کو ناقدین نے کافی پسند کیا۔ ۱۹۹۱ء میں اپنے دوست امیتابھ بچن کو لے کر انہوں نے فلم عجوبہ بنائی اور ہدایت کاری بھی کی لیکن بے جان اسکرپٹ کی وجہ سے فلم زیادہ کامیابی حاصل نہیں کرسکی۔  یہ فلم بچوں کو بہت پسند آئی۔ ششی کپور کے سنہری  کریئر  میں ان کی جوڑی اداکارہ شرمیلا  ٹیگور اور نندا کے ساتھ کافی پسند کی گئی۔ ان سب کے درمیان ششی کپور نے اپنی جوڑی سپر اسٹار امیتابھ بچن کے ساتھ بھی بنائی اور کامیاب رہے۔ یہ جوڑی سب سے پہلے فلم دیوار میں ساتھ نظر آئی۔ بعد میں اس نے ایمان دھرم،تریشول ،شان ، کبھی کبھی، روٹی کپڑا اور مکان، سہاگ، سلسلہ، نمک حلال، کالا پتھر  اور اکیلا میں بھی کام کیا اور شائقین کی تفریح کی۔  ۹۰ءکی دہائی میں صحت خراب رہنے کی وجہ سے ششی کپور نے فلموں میں کام کرنا تقریباً بند کردیا۔ ۱۹۹۸ءمیں ریلیز ہوئی فلم جناح  ان کے کریئر کی آخری فلم رہی جس میں انہوں نے مرکزی کردار ادا کیا تھا۔ ششی کپور نے تقریباً۲۰۰؍ فلموں میں کام کیا ہے۔ ششی کپورکو فلم انڈسٹری کے سب سے اعلیٰ اعزاز دادا صاحب پھالکے سے بھی نوازا جاچکا ہے۔  تقریباً ۳؍ دہائیوں تک ناظرین کواپنی اداکاری سے محظوظ کرنے والے ششی کپور۴؍ دسمبر۲۰۱۷ء کو  اس دنیا سے ہمیشہ کے لئے رخصت ہوگئے۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK