Inquilab Logo

مغربی بنگال میں ٹرین حادثہ، ۱۵؍ افراد ہلاک، ساٹھ سے زائد زخمی

Updated: June 17, 2024, 1:57 PM IST | New Delhi

مغربی بنگال کے نیو جلپائی گڑی میں مال گاڑی نے سیالدہ جانے والی کنچن جنگا ایکسپریس کو پیچھے سے ٹکر مار دی۔ تصادم کے باعث کنچن جنگا ایکسپریس کی کئی بوگیاں پٹری سے اتر گئیں، ممتا بنرجی کااظہار افسوس۔

The severity of the accident can be estimated from the image . Photo: PTI.
زیر نظر تصویر سے حادثے کی سنگینی کا اندازا لگایا جاسکتا ہے۔ تصویر:پی ٹی آئی۔

مغربی بنگال کے نیو جلپائی گڑی میں ایک بڑا ٹرین حادثہ پیش آیا ہے۔ آج صبح ۹؍ بجے کے قریب مال گاڑی نے سیالدہ جانے والی کنچن جنگا ایکسپریس کو پیچھے سے ٹکر مار دی۔ تصادم کے باعث کنچن جنگا ایکسپریس کی کئی بوگیاں پٹری سے اتر گئیں۔ اس حادثے میں لوکو پائلٹ سمیت ۱۵؍ افراد کی موت ہو گئی ہے۔ جبکہ۶۰؍ افراد زخمی بتائے جارہے ہیں۔ یہ حادثہ جلپائی گوڑی کے قریب پیش آیا۔ اطلاعات کے مطابق حادثے کا شکار ہونے والی کنچن جنگا ایکسپریس سیالدہ جا رہی تھی۔ اس ٹرین حادثے سے متعلق کئی تصویریں بھی منظر عام پر آئی ہیں۔ جن میں دیکھا جا سکتا ہے کہ یہ تصادم کتنا بھیانک تھا۔ تصادم کی وجہ سے ٹرین کی بوگیاں ہوا میں معلق رہ گئیں۔ اگرتلہ سے چلنے والی کنچن جنگا ایکسپریس کے آخری دو ڈبے ایک مال ٹرین سے ٹکرا گئے۔ 
 شمالی سرحدی ریلوے کے کٹیہار ڈویژن کے ڈویژنل ریلوے منیجر (ڈی آر ایم) نے بتایا کہ ۳۱۷۴؍کنچن جنگا ایکسپریس اگرتلہ سے سیا لدہ جا رہی تھی جب یہ حادثہ پیش آیا۔ حادثے کے فوراً بعد این ڈی آر ایف، ڈویژنل ٹیم اور ۱۵؍ایمبولینس موقع پر پہنچ گئیں۔ ریسکیو کام تیزی سے جاری ہے۔ اس حادثے میں اب تک۵؍لوگوں کی موت کی خبر سامنے آ رہی ہے۔ دارجلنگ کے ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ پولیس ابھیشیک رائے نے کہاکہ حادثے میں ۱۵؍ مسافروں کی موت ہو گئی ہے، ۶۰؍ سے زائد افراد زخمی ہوئے ہیں جن کی حالت نازک ہے۔ 
حادثے کے بعد وزیر اعظم نریندر مودی نے مرنے والوں کے لواحقین کو ۲؍لاکھ جبکہ زخمیوں کو۵۰؍ ہزار روپے دینے کا اعلان کیا ہے۔ صدر جمہوریہ ہند دروپدی مرمو نےمرنے والوں کے اہل خانہ کے ساتھ اظہار تعزیت کیااورزخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا کی۔ علاوہ ازیں اس حادثے کے حوالے سے مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے ایکس پر پوسٹ کرتے ہوئے لکھا’’میں دارجلنگ ضلع کے پھانسیوا علاقے میں ایک المناک ٹرین حادثے کے بارے میں جان کر حیران رہ گئی ہوں۔ تفصیلی معلومات کا انتظار ہے۔ ’’

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK