پیرااسپورٹس کی بیداری کیلئےپیرالمپک کھلاڑیوں کا پہلا ویبینار

Updated: May 22, 2020, 11:23 AM IST | Agency | New Delhi

دیپا ملک نے کہا کہ یہ ایک منفرد پہل ہے جس کا پیرا کھلاڑیوں کو فائدہ پہنچے گا

Deepa Malik - Pic : INN
دیپا ملک ۔ تصویر : آئی این این

کورونا کی وجہ سے ملک بھر میں لگے لاک ڈاؤن کے دوران ملک بھر میں پیرااسپورٹس کے تئیں لوگوں کو بیدار کرنے کے لئے اسپورٹس اتھارٹی آف انڈیا (سائی ) کے تعاون سے ہندوستانی پیرالمپک کمیٹی (پی سی آئی) نے پہلی بار ویبینار منعقد کیا جس میں پیرا اسپورٹس کے بنیادی، تکنیکی اور سائنسی پہلوؤں پر بحث کی گئی۔ریو پیرالمپک کی چاندی کا تمغہ فاتح اور سائی کی صدر دیپا ملک نے کہا کہ یہ ایک منفرد پہل تھی جس کا پیرا کھلاڑیوں کو فائدہ پہنچے گا۔ دیپا نے کہا کہ ۱۶؍دن کے پیرا اسپورٹس آن لائن ڈیولپمنٹ پروگرام کے ذریعے قومی کھیل ادارے (آئی این ایس ) کے رجسٹرڈ کوچ ان سے جڑے ۔
 پیرالمپک کھلاڑی دیپا نے اس ویبینار کو خطاب کیا جبکہ مختلف پیرا کھلاڑی، قومی کوچ، فزیو، سائی اور قومی پیرالمپک کمیٹی (این پی سی) کے کئی افسران اس میں شامل ہوئے۔
 دیپا نے کہاکہ ہمیں اس طرح کے ایجوکیشن پروگرام شروع کرکے خوشی ہو رہی ہے اور ہم اس کے لئے سائی کا شکریہ  اداکرتے ہیں جنہوں نے اس میں شرکت کی۔ اس پروگرام کی وجہ سے بہت سے آئی این ایس کوچ ہمارے ساتھ جڑے ہیں ۔ اب تک ملک میں پیرا اسپورٹس کے لئے کوئی ایجوکیشنل پروگرام نہیں منعقد کیا گیا تھا اور ہمارے کھلاڑی خود یہ سیکھ رہے تھے۔انہوں نے کہاکہ یہ سیشن صرف سیکھنے کا موقع نہیں ہے بلکہ یہ بڑا ہدف پروگرام ہے۔ ہمارے پاس جسمانی طور پرفٹ بہت کوچ ہیں جو پیرا کھلاڑیوں کو کوچنگ دینا چاہتے ہیں اور انہیں اب پتہ ہے کہ کس طرح آگے بڑھنا ہے۔
 دیپا نے کہاکہ یہ  ویبینار پیرالمپک کھلاڑیوں تک پہنچنے اور ان کے خیال جاننے کا ذریعہ ہے۔ تیسری، یہ ایسی جگہ ہے جہاں ہم پیرا کھلاڑی کے بارے میں جان سکتے ہیں کہ وہ کتنی مشکلات کو پار کر کے یہاں تک پہنچا ہے۔ یہ ایشیا سے متعلق نوجوانوں کے لئے ایک امید اور تحریک کا ذریعہ ہے۔ اس ویبینار میں سابق بیڈمنٹن کھلاڑی پلیلا گوپی چند اور شوٹر گگن نارنگ نے بھی شرکت کی اور ایسے پروگرام منعقد کرنے کیلئے سائی کی تعریف کی۔
 دیپا نے کہا کہ سائی آنے والے دنوں میں کوئز منعقد کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ ویبینار کے بعد ہم نے پہلے ہی سائی کو ۳۰؍سیٹ سوال پیش کئے ہیں اور وہ شرکاء کے لئے جلد ہی اپنے سوشل میڈیا ہینڈل کے ذریعے انہیں جاری کریں گے۔ دیپا پیرا اسپورٹس کے تمام فیڈریشنوں کے چیئرمین کے ساتھ مل کر اجلاس کریں گی اور ان سے آنے والے دنوں میں ایجوکیشن پروگرام کرانے کا مطالبہ کریں گی۔
 سائی کے سینئر ایگزیکٹو ڈائریکٹر ایس ایس رائے نے کہاکہ یہ جان کر بہت خوشی ہوئی کہ ہر سیشن میں ۳۰۰؍شرکاء شامل ہوں گے۔ یہ ایک شاندار پہل ہے اور ہم اس سے اب طویل سفر طے کریں گے۔۲۰۱۸ءایشیائی پیرا گیمز کی گولڈ میڈلسٹ ایکتا بھيان نے کہاکہ یہ ۱۶؍ روزہ ویبینار پیرا کھلاڑی کے لئے کافی اچھا ہے۔ میں نے ذاتی طور پر دوسرے کھیل کے بارے میں جانا۔ ایک پیرا اسپورٹس کھلاڑی کے لئے ورزش اور نفسیاتی مشورہ کے ساتھ غذائیت ضروری ہے۔ کئی سینئر کوچ اور کھلاڑیوں نے اپنے تجربےشیئر کئے جن سے نوجوان کھلاڑیوں کو مدد ملے گی۔ 
 ایکتا نے کہاکہ نوجوان کھلاڑیوں کا جوش دیکھ کر خوشی ہوئی۔ میں اس پہل کے لئے سائی کا شکریہ ادا کرتی ہوں اور آگے بھی ایسے سیشن منعقد ہونے کا یقین رکھتی ہوں، خاص طور پر لاک ڈاؤن کے دوران۔ پیرا بیڈمنٹن اسٹار سوكانت کدم نے کہاکہ یہ اچھی پہل ہے اور اس سے ملک بھر میں پیرا اسپورٹس کے تئیں بیداری بڑھے گی۔ تمام سیشن کافی اہم اور جانكاري والے تھے۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK