اولمپک چمپئن کو ہرانامیرے کریئر کا ٹرننگ پوائنٹ تھا: سندھو

Updated: July 28, 2020, 11:47 AM IST | Agency | Mumbai

عالمی چمپئن ہندوستانی بیڈ منٹن کھلاڑی پی وی سندھو نے کہا ہے کہ اولمپک چمپئن لی زوئی روئی کو۲۰۱۲ء میں شکست دینا ان کے کریئر کا اہم موڑ ثابت ہوا اور اس نے ان کے حوصلے کو کافی حد تک بڑھایا۔

PV Sindhu - Pic : INN
پی وی سندھو ۔ تصویر : آئی این این

عالمی چمپئن ہندوستانی بیڈ منٹن کھلاڑی پی وی سندھو نے کہا ہے کہ اولمپک چمپئن لی زوئی روئی کو۲۰۱۲ء میں شکست دینا ان کے کریئر کا اہم موڑ ثابت ہوا اور اس نے ان کے حوصلے کو کافی حد تک بڑھایا۔
 سندھو نے یہ انکشاف آن لائین چیٹ شو `ان اسپورٹ لائٹ میں ٹیبل ٹینس پلیئر مدیت دانی کے ساتھ گفتگو میں کیا۔ سندھو نے کہا کہ میرے لئے اہم موڑ تب آیا جب میں نے ۲۰۱۲ء میں لی زوئی روئی کو شکست دی۔ وہ اس وقت اولمپک چمپئن تھیں اور میں نے انہیں چائنا ماسٹرس کے کوارٹر فائنل میں شکست دی تھی۔ انہوں نے کہا کہ زوئی روئی کو شکست دینے کے بعد ان کا اعتماد بہت بڑھ گیا تھا اور اس نے انہیں پہلے سے کہیں زیادہ محنت کرنے کی ترغیب دی ہے۔ ایک سال بعد انہوں  نے ورلڈ چمپئن شپ میں کانسہ کا پہلا تمغہ جیتا۔ ۲۵؍ سالہ سندھو ۲۰۱۶ء کی ریو اولمپک چاندی کا تمغہ جیت چکی ہیں اور۲۰۱۹ء میں انہیں ہندوستان کی پہلی عالمی چمپئن بیڈ منٹن کھلاڑی ہونے کا اعزاز حاصل ہوا تھا ۔ انہوں نے ورلڈ چمپئن شپ میں مجموعی طور پر ۵؍ تمغے حاصل کئے ہیں جن میں ۲؍ کانسہ ، ۲؍ چاندی اور ایک سونے کا تمغہ شامل ہے۔ سندھو نے کہا کہ جب میں نے کھیلنا شروع کیا تو میں اچھا کھیل رہی تھی لیکن یہ کھیل بین الاقوامی سطح کا نہیں تھا۔ میں پہلے راؤنڈ ، کوالیفائنگ راؤنڈ میں ہار جاتی تھی۔ مجھے احساس ہوا کہ مجھے بہتر کھیلنا چاہئے اور پھر میں نے سخت محنت کرنا شروع کردی۔
 سندھو نے کہا کہ میں شکست پر افسردہ ہوتی تھی اور میں سوچتی تھی کہ میں کیا غلطیاں کررہی ہوں۔ میں کسی دوسرے کی طرح محنت کر رہی تھی لیکن اولمپک  چمپئن کھلاڑی کو شکست دینے سے مجھے اعتماد ملا اور میرے کھیل میں بہتری آنے لگی۔ سندھو نے کہا کہ جب ریو میں چاندی کا تمغہ جیتنے کے بعد حیدرآباد پہنچنے پر ایک مداح نے انہیں اپنی ایک ماہ کی تنخواہ سونپ دی۔ خیال رہے کہ وہ عالمی سطح پر ۷؍واں رینک رکھتی ہیں۔

pv sindhu Tags

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK