وراٹ کو ٹی۔۲۰؍ورلڈ کپ ٹیم میں ضرور ہونا چاہئے

Updated: July 22, 2022, 12:38 PM IST | Agency | Melbourne

آسٹریلیائی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان رکی پونٹنگ نے کہا کہ کوہلی بہت جلد اپنا فارم حاصل کر لیںگے ،یہ بھی کہا کہ اگر کوہلی کو باہر کیا گیا تو ان کی ٹیم میں واپسی مشکل ہوجائےگی

Virat Kohli. Picture:INN
وراٹ کوہلی ۔ تصویر: آئی این این

آسٹریلیائی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان رکی پونٹنگ کا کہنا ہے کہ وراٹ کوہلی موجودہ دور میں خراب فارم سے گزر رہے ہیں لیکن وہ انہیں ٹی۔۲۰؍ورلڈ کپ ٹیم میں شامل کرنے کے حق میں ہیں۔آئی سی سی ریویو پروگرام کے دوران آسٹریلیاکے سابق بلے باز نے یہ بات کہی۔  رکی پونٹنگ نے کہا ’’ایک مخالف ٹیم کا کپتان یا کھلاڑی کے طور پر میں ہمیشہ ہی وراٹ کوہلی کا سامنا کرنے سے ڈروںگا۔ مجھے پتہ ہے کہ ان کیلئے یہ مشکل دور ہے لیکن تمام عظیم کھلاڑی ایسے خراب دور سے گزریں ہیں اور اس کے بعد شاندار واپسی بھی کی ہے۔وراٹ کوہلی بھی بہت جلد اپنا فارم حاصل کرلیںگے۔بس کچھ وقت کی بات ہے۔‘‘ واضح رہے کہ کوہلی نے ستمبر۲۰۱۹ء سے کوئی سنچری نہیں اسکور کی ہے۔آئی پی ایل کے دوران بھی ان کا اسٹرائک ریٹ ۱۱۶؍کا تھا۔لیکن رکی پونٹنگ اس کے باوجود ہندوستانی ٹیم کے سابق کپتان کی وکالت کرتے ہوئےنظر آئے۔انہوںنے کہا ’’اگر میں ہندوستانی ٹیم انتظامیہ میں ہوتا تو کوہلی کی پوری حمایت کرتا تاکہ ان کا کھویا ہوا اعتماد واپس آسکے۔اگر میں ٹیم کا کپتان یا کوچ ہوتا تو میں کوہلی اور ان کے آس پاس کی چیزوں کو آسان بناتا تاکہ وہ خود کو پُرسکون محسوس کر سکیں۔اگر ان کا اعتماد بحال ہو گیا تو وہ بہت جلد اپنے فارم میں نظر آئیںگے۔‘‘ رکی پونٹنگ نے مزید کہا ’’اسی لئے میں کسی اور کو ان کی جگہ کھلانے کے بجائے ان پر ہی یقین رکھتا اور ان کے اعتماد کو بحال کرنے کی کوشش کرتا تاکہ وہ اپنا بہترین فارم حاصل کر سکیں۔اگر ٹی۔۲۰؍ورلڈ کپ میں وراٹ کی جگہ کوئی اور کھیلتا ہے اور ٹورنامنٹ میں اچھی کارکردگی کامظاہرہ کرتا ہے تو پھر وراٹ کوہلی کا ٹیم میں واپس آنا بہت مشکل ہوجائےگا ۔ ‘‘  رکی پونٹنگ نے حالانکہ کوہلی سے ٹیم کی اننگز کا آغازکرانے کے معاملے میں مختلف رائے دی۔انہوںنے کہا کہ کسی ایک آدمی کےلئے ٹیم کا توازن بگاڑنا ٹھیک نہیں ہے۔ آسٹریلیائی ٹیم کے اپنےزمانہ کے جارح بلے باز اور کپتان رکی پونٹنگ نے کہا کہ’’وراٹ کوہلی کا فارم لوٹ آئے اس کےلئے ہندوستانی ٹیم انظامیہ الگ الگ کوشش کر رہا ہے۔اسی کوشش میںان سے کچھ میچوں میں اننگز کی شروعات بھی کرائی گئی۔لیکن ایسا کرکے آپ کوہلی پریشان کر رہے ہیں۔اگر میں رہتا تو میں ان سے کہتا کہ آپ کی جگہ تیسرے نمبر پر ہے جہاں آپ طویل عرصہ سے بلے بازی کر رہے ہیں۔آپ کو اسی نمبر پر بلے بازی کرنی ہے۔اس کئے آپ خو د پر اعتماد رکھیں اور یہ غور کریں  کہ آپ نے اتنے برسوں میں جو کچھ حاصل کیا ہے اسے دوبارہ حاصل کریں اور آپ ایسا کر سکتے ہیں۔‘‘

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK