؍۲۰؍سالہ کریئر کے بہترین دور میں ہوں

Updated: June 17, 2022, 1:14 PM IST | Agency | Kolkata

ہندوستانی فٹبال ٹیم کے کپتان سنیل چھیتری ایشیا کپ کے فائنلس میں پہنچنے پر خوشی کا اظہار کیا

Sunil Chhetri .Picture:INN
ہندوستانی فٹبال ٹیم کے کپتان سنیل چھیتری۔ تصویر: آئی این این

ہندوستانی فٹبال ٹیم کے کپتان سنیل چھیتری نے کہا ہے کہ ٹیم گھریلو حالات میں اپنی ہی سرزمین پر ایشیا کپ کھیلنا پسند کرے گی۔ گزشتہ روزہانگ کانگ کے خلاف ملنے والی چار صفر کی فتح کے بعد ہندوستانی ٹیم نے ایشیا کپ فائنلس کیلئے کوالیفائی کر لیا ہے۔میچ کے بعد ٹیم کے کپتان سنیل چھیتری نے کہا کہ وہ اپنے کریئر کے بہترین دور میں ہیں۔تیز بارش کے باوجود آخری کوالیفائنگ میچ میں اسٹیڈیم پوری طرح سے بھرا تھا۔اس بات سے متاثر ہوکر سنیل نے کہا کہ وہ ایشیا کپ کا فائنلس ہندوستان میں اپنے ناظرین کے سامنے کھیلنا چاہتے ہیں۔ واضح رہے کہ ہندوستانی فٹبال ٹیم نے تاریخ میں پہلی مرتبہ لگاتار دوسری بار ایشیاکپ کیلئے کوالیفائی کیا ہے۔سنیل نے میچ کے بعد کہا’’ہماری ٹیم جس طرح سے کھیل رہی ہے اس سے میں چاہتا ہوں کہ ہمارے مقابلے گھریلو میدان پر ہوں۔جس طرح سے مداح میدان پر میچ دیکھنے آرہے ہیں اس سے ہمارا حوصلہ بڑھتا ہے اور ہمیں مزید بہتر کھیلنے کی تحریک ملتی ہے۔‘‘ یاد رہے کہ ایشیا کپ فائنلس کے مقابلے آئندہ سال چین میں ہونے تھے لیکن وہاں کووڈ کے بڑھتے معاملات کو دیکھتے ہوئے اس نے میزبانی سے ہٹنے کا فیصلہ کیا تھا۔ہندوستان نے اشیا کپ کے تیسرے دور کے کوالیفائر میں کمبوڈیا اور افغانستان پر جیت کے بعد گروپ’ڈی‘ میں ہانگ کانگ کے خلاف بھی شاندار جیت حاصل کی۔یہ تمام مقابلے کولکاتا کے سالٹ لیک اسٹیڈیم میں کھیلے گئے جہاں ۲؍سال کے طویل عرصہ بعد ہندوستانی فٹبال ٹیم میچ کھیلی۔ کپتان سنیل چھیتری نے کوالیفائر کے بعد قومی ٹیم کے نوجوان کھلاڑیو ں کی تعریف کی۔انہوںنے کہا ’’بچے شاندار ہیں،انہیں بچہ کہنے پر شاید وہ مجھے مار ڈالیں(ہنستے ہوئے) لیکن سب ہی شاندار ہیں۔ ہمارے ڈریسنگ روم سینئر اور جونیئر کھلاڑیوں کا اچھا امتزاج ہے۔ٹیم میں لسٹن کولاسو اور سریش وانگجام کے ساتھ آکاش مشرا اور روشن سنگھ بھی شاندار ہیں۔ٹیم میں کافی نوجوان کھلاڑی آرہے ہیں۔ ایشان پنڈیتا نے ہانگ کانگ کے خلاف اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ان کے ساتھ عبدالصمد نے بھی اچھا کھیلا اور مجھے امید ہے کہ وہ مزید بہتر کریںگے۔‘‘ ہانگ کانگ کے خلاف انور علی نے ہندوستان کیلئے پہلا جبکہ سنیل چھیتری نے دوسرا گول کیا تھا۔ کوالیفائر میں اپنی کارکردگی کے تعلق سے ۳۷؍سال کے ہو چکے سنیل نے کہاکہ انہیں لگتا ہے کہ وہ اپنے کریئر کے بہترین فارم میں ہیں۔واضح رہے کہ سنیل چھیتری ۲۰۱۱ء اور ۲۰۱۹ء کے بعد اپناتیسرا ایشیا کپ فائنلس کھیلیںگے۔ ہندوستانی ٹیم کے کپتان نے کہا ’’مجھے لگتا ہے کہ میں اپنے بہترین فارم میں ہوں۔گزشتہ ایشیائی کپ کی بات پرانی ہوگئی ہے۔ہمیں سخت محنت کرنی چاہئے ۔اس بات کی اہمیت نہیں ہے کہ میں آئندہ بڑے ٹورنامنٹ میں کھیلوںگا یا نہیں اہمیت اس بات کی ہے ہندوستان ایشیا کپ میں ہونا چاہئے۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK