?>

بغیر دماغ والے آٹھ بحری جاندار

آئی اسٹاک

Inquilab
By Aliya sayyed
Published May 02, 2024

کورلس (Corals)

کورلس کی متعدد اقسام ہیں۔ ان کے عصبی نظام کو ’’نرو نیٹ‘‘ کہتے ہیں جس کے ذریعے وہ چیزوں کو سمجھتے ہیں۔

آئی اسٹاک

جیلی فش (Jellyfish)

جیلی فش کا دل اور پھیپھڑے نہیں ہوتے۔  وہ اپنی جلد سے سانس لیتی ہے۔ وہ ایسے نیورون کی مالک ہے جو جسم کے دیگر حصے کو سگنل بھیجتے ہیں۔

آئی اسٹاک

سی اینی مونس (Sea Anemone)

یہ اپنے لمبے ریشۂ حساس کو شکار کرنے اور کھانے کیلئے استعمال کرتا ہے۔ رنگین ساخت کے سبب یہ اینی مون نامی پھول سے منسوب ہے۔

آئی اسٹاک

سی کوکمبر (Sea Cucumber)

یہ ایسا خطرناک مادہ خارج کرنے کی طاقت رکھتا ہے جو انسانوں کو ہمیشہ کیلئے اندھا کر سکتا ہے۔ اس کے پاس دل اور پھیپھڑے بھی نہیں ہوتے ہیں۔

آئی اسٹاک

اسٹارفش (Starfish)

اسٹار فش کے جسم میں خون نہیں ہوتا ۔ یہ تیر بھی نہیں سکتی مگر رینگنے میں ماہر ہوتی ہے۔

آئی اسٹاک

سی لیلیز (Sea Lilies)

سمندری پودوں کی مانند نظر آنے والا یہ جاندار ساحل اور سمندر کی گہرائی دونوں میں رہ سکتا ہے۔ اس کی ۷۰۰؍ سے زائد اقسام ہیں۔

آئی اسٹاک

YOU MAY ALSO LIKE

۱۰۰؍ کروڑ کلب: عامر خان کی چھ فلمیں

۵؍ معروف ہندوستانیوں کی خودنوشت

سی اسپونجیز (Sea Sponges)

یہ ۵۰۰؍ ملین سال قبل سے سمندر میں پائے جاتے ہیں جبکہ ان کی ۵؍ ہزار سے زائد اقسام ہیں۔ یہ روزانہ کئی لیٹر پانی فلٹر کرسکتے ہیں۔

آئی اسٹاک

سی ارچنس (Sea Urchins)

یہ بغیر آنکھوں اورہڈیوں والا جاندار ہے۔ اس کی ایک قسم ’’فلار ارچنس‘‘ کو دنیا کے خطرناک جاندار میں شمار کیا جاتا ہے کیونکہ اس کے جسم میں مہلک زہر ہوتا ہے۔

آئی اسٹاک

۱۰۰؍ کروڑ کلب: عامر خان کی چھ فلمیں

Follow Us on :-