’کیا ہم مسلمانوں کو قتل بھی نہیں کرسکتے‘ کہنے والا شخص ہریانہ میں بی جےپی کا ترجمان مقرر

Updated: June 14, 2021, 9:06 AM IST | Chandigarh

ہجومی تشدد میں محمد آصف کے قتل کو جائز ٹھہرانے والے کرنی سینا کے اسی سربراہ نے دیپکا پڈوکون کا سرقلم کرنے والے کیلئے بھی انعام کا اعلان کیاتھا

Suraj Pal Amu who is now the spokesperson of Haryana BJP.Picture:PTI
سورج پال امو جو اَب ہریانہ بی جےپی کا ترجمان ہے۔ تصویرپی ٹی آئی

 ابھی حال ہی میں  ۳۰؍ مئی کو ہریانہ  میں منعقدہ ایک نفرت انگیز  مہا پنچایت میں مسلمانوں کے قتل کو جائز ٹھہراتے ہوئے ’’کیا ہم  انہیں قتل بھی نہیں کرسکتے‘‘ کہنے  والے  شری کرنی سینا کے  سربراہ سورج پال اَمو کو ہریانہ  بی جےپی نے اپنا ترجمان مقرر کر لیا ہے۔ اس تقرری کا اعلان پارٹی کی ریاستی اکائی کے صدر اوم پرکاش دھنکڑ نے ٹویٹر پر کیا ہے۔ اس سلسلے میں  سوشل میڈیا پر ہورہی تنقیدوں کو زعفرانی پارٹی  نے یکسر نظرانداز کردیاہے۔  
  سورج پال ۳۰؍مئی کی اپنی مذکورہ تقریر کے بعد ہی  ایک بار پھر شہ سرخیوں میں آئے ہیں۔   وہ  آصف نامی ایک مسلم نوجوان کو ہجومی تشدد میں قتل کرنے والوں کی حمایت  اور ان کی رہائی کا مطالبہ کر رہےتھے۔میوات کے خلیل پور میں رہنے والے  جواں سال آصف کو ۱۶؍ مئی کی رات کچھ گجر شرپسندوں نے پیٹ پیٹ کر مار دیاتھا۔ وہ دوائیں  لے کر واپس آرہاتھا تب اس پر یہ حملہ کیا گیا تھا۔ اس سلسلے میں پولیس نے کئی نوجوانوں کو گرفتار کیا ہے جن کی رہائی کیلئے جدوجہد شروع ہوگئی ہے۔ اسی سلسلے میں منعقدہ  مہا پنچایت   میں  سورج پال  امو نے مسلمانوں  کے قتل کا جواز پیش کرتے ہوئے کہا تھا کہ ’’وہ ہماری ماؤں بیٹیوں کی فحش تصویریں  بناتے ہیں اور اہم انہیں قتل بھی نہیں کرسکتے؟‘‘  مجرموں کی حمایت  میں مہا پنچایت کا  بھی دفاع کرتے ہوئے انہوں نے پولیس کو ہی چیلنج کرڈالا کہ ’’اگر کسی نے یہ مہاپنچایت  روکنے کی کوشش کی تو ہم اسے جان سے مار دیں گے۔ اگر کسی نے اپنی ماں کا دودھ پیا ہے تو  روک کر دکھائے۔‘‘ اس سے قبل ۲۰۱۷ء میں سورج پال امو اُس وقت سرخیوں  میں آئے تھے جب فلم پدماوت کے خلاف احتجاج کے دوران انہوں نے فلم اداکارہ دیپکا پڈوکون کا سردھڑ سے الگ کرنےپر انعام کا اعلان کیاتھا۔ اپنا ویڈیو امو  نے خود   ہی فیس بک پر پوسٹ کیا ہے جس  کے کیپشن میں انہوں  نے ہندوسماج کو اکسانےکی کوشش کی ہے۔ 

muslin Tags

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK