سنڈے میگزین

مودی حکومت کاتماشہ اَب ختم ہونے کو ہے، دِن گنے جاچکے ہیں

مرکزی حکومت نے گزشتہ پانچ برسوں میں جس طرح سے عوام کو بے وقوف بنایا ہے اور اُن پر مظالم ڈھائے ہیں ، وہ اب ناقابل برداشت ہوتے جارہے ہیں ۔ شہریت ترمیمی قانون اور این آر سی کے خلاف جس طرح سے پورے ملک میں احتجاج ہورہا ہے، لوگ سڑکوں پر اُتر ے ہیں ،اس سے کم از کم یہی پیغام ملتا ہے۔ دراصل ظلم کی بھی ایک حد ہوتی ہے۔ ’ظلم پھر ظُلم ہے بڑھتا ہے تو مِٹ جاتا ہے : خون پھر خون ہے، ٹپکے گا تو جم جائے گا‘۔ اب ظلم کے خلاف ایک ایسی مزاحمت اٹھ کھڑی ہوئی ہے جو کسی طرح رُکنے کا نام نہیں لے رہی ہے۔ دن بدن بڑھتی ہی چلی جارہی ہے۔حکومت کو اس مزاحمت کے آگے گھٹنے ٹیکنے ہی پڑیں گے۔

January 19, 2020, 9:44 am IST

 مودی حکومت کاتماشہ اَب ختم ہونے کو ہے، دِن گنے جاچکے ہیں

مظاہرین کو دبانے کی کوشش حکومت کے خوف کا مظہر

یہ حکومت گھبرا گئی ہے مظاہرین کے جوش اور ولولے سے، یہ حکومت خوفزدہ ہےمظاہرین کے حوصلوں سے جنہیں وہ کسی ذریعے سے پست نہیں کرپا رہی ہے، حکومت کسی قیمت پر سی اے اے واپس نہیں لے گی ، نہ لے،لیکن مظاہرین بھی کسی قیمت پر قدم پیچھے نہیں ہٹائیں گے۔

January 19, 2020, 9:21 am IST

مظاہرین کو دبانے کی کوشش حکومت کے خوف کا مظہر

دل کی بات بتا دیتا ہے اصلی نقلی چہرہ

حکومت نئی نسل کی سوچ وفکر سے خوفزدہ ہے۔ورنہ اگر صرف طلبہ کے درمیان تصادم کا معاملہ ہوتا تو نقاب پوشی کی ضرورت نہیں ہوتی اور نہ یونیورسٹی انتظامیہ اور دہلی پولیس کی سازش کے تانے بانے بنے جاتے... سچائی یہ ہے کہ لاکھ نقاب ڈالے جائیں اصلی اور نقلی چہرے کبھی نہ کبھی پہچانے ہی جاتے ہیں۔ جے این یو حادثے نے تو نقاب پوشوں کے ریموٹ کنٹرول کے چہرے تک کو اجاگر کردیا ہے۔

January 12, 2020, 10:00 am IST

دل کی بات بتا دیتا ہے اصلی نقلی چہرہ
This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK