ماحولیات کےتحفظ کیلئےکیجریوال حکومت کی ریڈ لائٹ آنگاڑی آف مہم کا آغاز ڈرائیوروں سے تعاون کی اپیل

Updated: October 19, 2021, 8:13 AM IST | new Delhi

وزیر ماحولیات گوپال رائے خود سڑک پر اُترے، ڈرائیوروں کو گلاب کے پھول پیش کرکے لال بتی پر گاڑی روکنے کی درخواست کی،لوگوں میں ’ وزیراعلیٰ کی عوام کے نام اپیل‘ کے پمفلٹ تقسیم کئے گئے

An activist in the Red Light on the Vehicle of the Campaign
’ریڈ لائٹ آن گاڑی آف مہم‘ میں ایک کارکن

: دہلی  میں ماحولیات کی آلودگی پر قابو پانے کیلئے  ریاستی حکومت نے ایک بار پھر مہم کا آغاز کیا ہے۔ دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے اس کی اطلاع دیتے ہوئے کہا کہ دہلی کے کچھ حصوں میں گاڑیوں کی آلودگی کو کم کرنے کیلئے ’ریڈ لائٹ آن گاڑی آف مہم‘ پیر سے شروع کی گئی ۔ انہوں نے یہاں آئی ٹی او چوک سے اس مہم کا آغاز کیا ۔اس موقع پروزیر ماحولیات نے ڈرائیوروں کو گلاب کے پھول پیش کرکے لال بتی پر گاڑی روکنے کی اپیل کی۔ اس دوران سول ڈیفنس رضاکاروں نے لوگوں کو ’ وزیراعلیٰ کی عوام کے نام اپیل‘ کے پمفلٹ تقسیم کئے ، جس میں گاڑی ڈرائیوروں  سے ریڈ لائٹ آن ہونے پر گاڑی آف کرنے ، ہفتے میں گاڑی کی ایک ٹرپ کم کرنے اور اپنے فون میں گرین دہلی موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کی اپیل کی گئی ہے ۔
 وزیر ماحولیات نے کہا کہ آلودگی سے متعلق تحقیقی اعداد و شمار بتاتے ہیں کہ گاڑیوں کی آلودگی سب سے نمایاں کردار ادا کرتی ہے ۔ اس کے علاوہ فضائی آلودگی کا بھی اہم کردار ہے۔ جس طرح دہلی حکومت ڈسٹ آلودگی کے خلاف انٹی ڈسٹ مہم چلا رہی ہے۔ اسی طرح دہلی کے اندر گاڑیوں کی آلودگی کو کم کرنے کیلئے ’ریڈ لائٹ آن گاڑی آف مہم‘ شروع کی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ پٹرولیم کنزرویشن ریسرچ اسوسی ایشن کے اعداد و شمار کے مطابق ’ریڈ لائٹ آن گاڑی آف مہم‘ لوگ کامیابی کے ساتھ عمل کرتے ہیں، تو دہلی کے۱۳؍سے۲۰؍ فیصد تک گاڑیوں کی آلودگی کو کم کیا جا سکتا ہے۔ دہلی کے اندرچلنے والی گاڑیاں جو ستمبر کے مہینے میں چل رہی تھیں ، وہ گاڑیاں آج بھی چل رہی ہیں  لیکن اس وقت آلودگی کی سطح  معمول پرتھی ۔ سردیوں میں موسم تبدیل ہونے اور پرالی جلانے سے آلودگی کی سطح بڑھ رہی ہے۔
  پرالی جلانے کے واقعات جیسے جیسے بڑھ رہے ہیں ، اسی رفتارسے دہلی کی آلودگی کی سطح  بڑھ رہی ہے۔ دوسری ریاستوں میں جو پرالی جل رہی ہے ، ان ریاستوں میں ہم کچھ نہیں کر سکتے ۔  اس لئے ہماری کوشش ہے کہ دہلی کے حصےکی گاڑیوں کی آلودگی کو کم کیا جائے ۔ اس کیلئے ریڈ لائٹ آن گاڑی آف مہم شروع کی گئی ہے۔
 گوپال رائے نے بتایا کہ گزشتہ دنوں مرکزی وزیر کے ساتھ ایک مشترکہ میٹنگ کا انعقاد عمل میں آیا تھا ، جس میں ہریانہ ، پنجاب ، راجستھان اور اتر پردیش کے ماحولیاتی وزراء نے بھی شرکت کی تھی ۔ ان تمام لوگوں کے سامنے پوری بات رکھی گئی تھی۔ وزیر ماحولیات گوپال رائے نے بتایا کہ ہم نے اس میٹنگ میں درخواست کی تھی کہ جس طرح دہلی  پرالی کے مسئلے سے نمٹ رہی ہے اسی طرح دیگر ریاستیں بھی پرالی جلانے پر پابندی عائد کریں ۔ دہلی حکومت نے پوسا بائیو ڈیکمپوزر تیار کرنے سے لے کر کھیتوں میں چھرکاؤ کرنے تک کی  ذمہ داری اٹھائی ہے ۔  اگر دوسری ریاستی حکومتوں نے یہ ذمہ داری قبول کی ہوتی توپرالی نہیں جلتی ۔ دیگر ریاستی حکومتوں نے ذمہ داری کو مکمل طور پر نہیں نبھایا ، جس کی وجہ سے دوسری ریاستوں میں دوبارہ پرالی جل رہی ہے۔ دہلی کے اندر فضائی آلودگی بڑھ رہی ہے۔ انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ یہ مہم عوامی شرکت داری سے کے ساتھ آگے بڑھے گی ۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہم سب مل کر لڑیں گے تب ہی اس آلودگی کو کم کر پائیں گے، کیونکہ  یہ ذمہ داری ہم سب کی ہے ۔
 خیال رہے کہ آلودگی کی وجہ سے دہلی میں بہت سارے مسائل پیدا ہورہے ہیں۔ یہاں کئی مرتبہ سپریم کورٹ اور ہائی کورٹ کو از خود نوٹس لے کر ماحولیات کے تحفظ کے معاملے میں حکومتوں کو ہدایت دینی پڑی ہے۔ دہلی حکومت نے ’ریڈ لائٹ آن، گاڑی آف‘ نامی مہم سے قبل ’طاق جفت‘ نامی ایک مہم شروع کی تھی جس کے تحت ایک دن طاق نمبر والی گاڑیاں سڑکوں پر اُترتی تھیں تو دوسرے دن جفت نمبر والی گاڑیاں۔ ا س پر دہلی کی کیجریوال حکومت کو کافی تنقیدوں کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ 

kejriwal Tags

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK