اداکارسنجے دت کی نئی تصویروں پر بیٹی کا محبت بھرا تبصرہ

Updated: October 18, 2020, 2:09 PM IST | Agency | Mumbai

موذی مرض پھیپھڑوں کے کینسر میں مبتلا اداکار سنجے دت نے کام پر واپسی کے بعد سوشل میڈیا پر نئی تصویریں شیئر کی ہیں جن پر اُن کی بیٹی نے محبت بھرا تبصرہ کیا ہے۔

Sanjay Dutt - Pic : INN
سنجے دت ۔ تصویر : آئی این این

موذی مرض پھیپھڑوں کے کینسر میں مبتلا اداکار سنجے دت نے کام پر واپسی کے بعد سوشل میڈیا پر نئی تصویریں شیئر کی ہیں جن پر اُن کی بیٹی نے محبت بھرا تبصرہ کیا ہے۔ انسٹاگرام پر سنجے دت نے اپنی نئی تصویریں شیئر کی ہیں جن میں اداکار نے سیاہ رنگ کی ٹی شرٹ اور پینٹ پہنی ہوئی ہے جبکہ آنکھوں پر کالا چشمہ لگایا ہوا ہے۔سنجے دت نے انسٹاگرام پر تصویریں شیئر کرتے ہوئے ہیش ٹیگ میں اپنی نئی آنے والی فلم کا نام ’کے جی ایف ۲‘ بھی لکھاہے۔
 بالی ووڈ اداکار کی پوسٹ پر محبت بھرا تبصرہ کرتے ہوئے اُن کی بیٹی تریشلانے لکھا’ ’آئی لو یو‘‘ اور اُس کے ساتھ ہی اظہارِ محبت والے ایموجیز کا اضافہ بھی کیا۔دوسری جانب سنجے دت کی طویل عرصے بعد تصویریں دیکھ کر اُن کے مداح بے حد خوش ہو رہے ہیں اور اداکار کی جلد صحتیابی کیلئے دُعائیہ پیغامات بھی جاری کررہے ہیں۔خیال رہے کہ اس سے قبل سنجے دت کا ایک ویڈیو پیغام سامنے آیا تھا جس میں اُن کا کہنا تھا کہ وہ کینسر کو شکست دینے کیلئے پُرعزم ہیں۔ویڈیو پیغام میں سنجے دت نے اپنی بھنویں پر موجود کیمو تھراپی کے نشان کو دکھاتے ہوئے مداحوں سے کہا تھا کہ اگر آپ کو یہ نشان نظر آرہا ہے تو یہ اُن کی زندگی کا ایک حالیہ داغ ہے لیکن وہ بہت پُرامید ہیں کہ وہ جلد ہی اس کینسر سے آزاد ہوجائیں گے۔
 سنجے نے کام پر واپس آنے کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ اپنی نئی فلم کے جی ایف ۲؍ کیلئے  داڑھی بڑھا رہے ہیں جس میں وہ ایک منفی کردار ادا کریں گے۔اُن کا مزید کہنا تھا کہ اُنہیں دوبارہ سیٹ پر واپس آنے پر بہت خوشی محسوس ہو رہی ہے۔
 واضح رہے کہ دو ماہ قبل سنجے دت کو تیسرے یا چوتھے درجے کے کینسر میں مبتلا ہونے کی اطلاعات سامنے آئی تھیں۔میڈیا کے مطابق پہلے سنجے دت نے علاج کیلئے  امریکہ جانے کا فیصلہ کیا تھا اور طبی بنیادوں پر۵؍ سال کیلئے  امریکہ کا ویزا حاصل کرلیا بعدازاں انہوں نے اپنا علاج ممبئی کے کوکیلا بین اسپتال میں شروع کروالیا تھا۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK