رندھیر کپور نے اداکاری کے ساتھ ہدایتکاری بھی کی ہے

Updated: February 15, 2020, 9:07 AM IST | Mumbai

بالی ووڈ میں رندھیر کپور کا شمار ایک ایسی شخصیت کے طور پر کیا جاتا ہے جنہوں نے نہ صرف اداکاری کے میدان میں بلکہ فلم پروڈکشن اور ہدایتکاری کے میدان میں بھی قسمت آزمائی۔ ممبئی میں ۱۵؍ فروری ۱۹۴۷ء کو پیدا ہونے والے رندھیر کپور کو اداکاری کا فن وراثت میں ملا۔ رندھیر کپور کے والد راج کپور فلم انڈسٹری کے جانے مانے اداکار اور فلمساز و ہدایتکار تھے۔

رندھیر کپور نے اداکاری کے ساتھ ہدایتکاری بھی کی ہے
رندھیر کپور۔ تصویر: مڈڈے

 سالگرہ کے موقع پر خراج تحسین
ممبئی  : بالی ووڈ میں رندھیر کپور کا شمار ایک ایسی شخصیت کے طور پر کیا جاتا ہے جنہوں نے نہ صرف اداکاری کے میدان میں بلکہ فلم پروڈکشن اور ہدایتکاری کے میدان میں بھی قسمت آزمائی۔ ممبئی میں ۱۵؍ فروری ۱۹۴۷ء کو پیدا ہونے والے رندھیر کپور کو اداکاری کا فن وراثت میں ملا۔ رندھیر کپور کے والد راج کپور فلم انڈسٹری کے جانے مانے اداکار اور فلمساز و ہدایتکار تھے۔ رندھیر کپور نے ابتدائی دور میں بطور چائلڈ آرٹسٹ ’شری۔۴۲۰‘ اور ’دو استاد‘ جیسی کچھ فلموں میں کام کیا۔ اس کے بعد انہوں نے ۱۹۶۸ء میں ریلیز ہونے والی فلم ’جھک گیا آسمان‘ میں اسسٹنٹ ڈائریکٹر کے طور پر کام کیا۔ ۱۹۷۱ء میں ریلیز ہونے والی فلم ’کل آج اور کل‘ کے ذریعے رندھیر کپور نے اداکار اور آزاد ڈائریکٹر کے طور اپنی ایک نئی شناخت بنانا شروع کی اور فلم انڈسٹری میں اس نئے شعبے میں قدم رکھا۔ ’کل آج اور کل‘ ہندوستانی سنیما کی تاریخ میں کلاسیکی فلموں کے طور پر شمار کی جاتی ہے۔ اس فلم میں ۳؍ نسلیں پرتھوی راج کپور، راج کپور اور رندھیر کپور ایک ساتھ نظر آئے۔ اس فلم میں ببیتا نے بھی اہم کردار نبھایا تھا جو بعد میں رندھیر کپور کی اہلیہ بن گئی۔ ۱۹۷۲ء میں رندھیر کپور کی ’جوانی دیوانی‘ اور ’رامپور کا لکشمن‘ جیسی سپر ہٹ فلمیں ریلیز ہوئیں ۔ ۱۹۷۴ء میں ریلیز ہونے والی سپر ہٹ فلم ’ہاتھ کی صفائی‘ میں رندھیر کپور کی جوڑی ونود کھنہ کے ساتھ بہت سراہی گئی۔ فلم میں دونوں فنكارو ں کا ٹکراؤ دیکھنے کے قابل تھا۔۱۹۷۵ء میں ریلیز ہونے والی فلم ’دھرم کرم‘ میں ایک بار پھر رندھیر کپور نے ہدایتکاری کے ساتھ هي اداکاری بھی کی لیکن بدقسمتی سے یہ فلم باکس آفس پر کامیاب نہیں ہو سکی۔ ۱۹۷۷ء میں ریلیز ہونے والی فلم ’چاچا بھتیجا‘ رندھیر کپور کے کریئر کی ایک اور سپر ہٹ فلم ثابت ہوئی۔ اس فلم میں دھرمیندر کے ساتھ ان کی جوڑی کافی پسند کی گئی۔۱۹۷۸ء کی دفلم’قسمیں وعدے‘ رندھیر کپور کے کریئر کی قابل ذکر فلموں میں شمار کی جاتی ہے۔ اس فلم میں امیتابھ بچن نے اہم کردار نبھایا تھا۔ امیتابھ جیسے سپر اسٹار کی موجودگی میں بھی رندھیر کپور نے اپنی مزاحیہ اداکاری سے ناظرین کو اپنا دیوانہ بنا دیا۔۸۰ء کے عشرے میں رندھیر کپور کی فلموں کو باکس آفس پر کوئی خاص کامیابی نہیں مل پائی۔ ۱۹۹۱ء میں ریلیز ہونے والی فلم ’حنا ‘بطور ہدایتکار رندھیر کپور کی آخری فلم ثابت ہوئی۔ پہلے اس فلم کی ہدایتکاری راج کپور کرنے والے تھے لیکن ان کی بے وقت موت کی وجہ سے رندھیر کپور نے ’حنا‘ کی ہدایتکاری کی۔ فلم باکس آفس پر سپر ہٹ ثابت ہوئی۔۹۰ء کے عشرے میں اپنے والد کے ’آر کے فلمز‘ کے بینر تلے رندھیر کپور نے ’پریم گرنتھ‘ اور ’آ اب لوٹ چلیں ‘ جیسی فلمیں بنائیں لیکن ان فلموں کو کامیابی نہیں ملی۔ 

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK