شرد پوار کیخلاف متنازع پوسٹ ،طالب علم ممبئی پولیس کی تحویل میں

Updated: May 20, 2022, 8:31 AM IST | Nadeem asran | Mumbai

: نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے سربراہ شرد پوار کے خلاف مراٹھی اداکارہ کیتکی چتلے کے علاوہ ایک ۲۳؍ سالہ طالب علم نے بھی فیس بک پر متنازع پوسٹ ڈالی تھی

Accused Nikhal Bhamre brought from Nashik in the custody of Mumbai Police. (Photo: PTI)
ناسک سے لایا گیا ملزم نکھل بھامرے ممبئی پولیس کی حراست میں۔ (تصویر: پی ٹی آئی)

 نیشنلسٹ  کانگریس پارٹی (این سی پی) کے  سربراہ شرد پوار کے خلاف مراٹھی اداکارہ کیتکی چتلے کے علاوہ ایک ۲۳؍ سالہ طالب علم نے بھی فیس بک پر   متنازع پوسٹ ڈالی تھی ۔ ناسک پولیس نے اس طالب علم  کو بھی گرفتاری کیا تھا ۔ اب ممبئی پولیس نے ناسک پولیس سے  ٹرانزٹ ریمانڈ پر ملزم کی تحویل حاصل کی ہے۔ 
  شرد پوار کے خلاف متنازع پوسٹ ڈالنے والا ملزم نکھل بھامرے فارمیسی کا طالب علم ہے ۔ ناسک پولیس نے اسے گزشتہ سنیچر کو گرفتار کیا تھا ۔  یہ بھی واضح رہے کہ اس معاملہ میں این سی پی سینئر لیڈر اور ریاستی وزیر ہاؤسنگ جتیندر اوہاڑ نے پونے، تھانے اور ممبئی پولیس کمشنر کے علاوہ مہاراشٹر کے ڈائریکٹر جنرل آف پولیس رجنیش سیٹھ سے بھی شرد پوار کے خلاف متنازع پوسٹ ڈالنے والوں کے پر کارروائی کرنے کی اپیل کرتے ہوئے مکتوب روانہ کیا تھا  ساتھ ہی مذکورہ  طالب علم کے خلاف کارروائی کرنے کی بھی اپیل کی تھی ۔
  ممبئی پولیس نے بدھ کو ناسک پولیس کی تحویل ختم ہوتے ہی ناسک کورٹ سے ملزم کو ٹرانزٹ ریمانڈ پر اس کی تحویل میں دینے کی درخواست کی تھی جسے قبول کر لیا گیا ۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK