گوونڈی میں کسان سہیوگ سمیتی کے ذمہ داران کو پولیس کی جانب سے دفعہ۱۴۹؍ کانوٹس

Updated: January 13, 2021, 11:17 AM IST | Kazim Shaikh | Govandi

احتجاج میں فوت ہونے والے کسانوں کو خراجِ عقیدت پیش کرنے کیلئے ۱۵؍جنوری کو پروگرام کے انعقاد کی پولیس سے اجازت لینے کیلئے تحریری درخواست دی تھی

Mumbai Police - Pic : MidDay
ممبئی پولیس ۔ تصویر : مڈ ڈے

ممبئی باغ کی طرز  پر گوونڈی میں بھی  علامتی’ کسان باغ ‘ کے ۵؍ ذمہ داروں کو گوونڈی  کے شیواجی نگر پولیس نے دفعہ ۱۴۹؍ کا نوٹس دیا ہے ۔ یہ نوٹس ’کسان  سہیوگ  سمیتی ‘کے ذمہ داروں کو اس وقت دیا گیا جب انھوں نے جمعہ کو ہونے والے پروگرام کیلئے پولیس اسٹیشن میں تحریری طور سے اجازت لینے کی کوشش کی  ۔ اس پروگرام میں  اب تک کسان آندولن میں ۷۰؍ سے زائد فوت ہونے والے کسانوں کو  گوونڈی میں۱۵؍ جنوری کو بعد نماز جمعہ کارگل چوک پر خراج عقیدت پیش کیا جانے والا تھا۔  
  گوونڈی میں کسان سہیوگ سمیتی کے کنوینر عبدالباری خان نے نمائندہ ٔ انقلاب  سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ممبئی باغ کی طرز پر علامتی ’کسان باغ ‘ کے متعدد  ذمہ داروں کو شیواجی نگر  پولیس   دفعہ ۱۴۴؍ کا نوٹس دے کر ہمارے حوصلےپست کرنا چاہتی ہے ۔ کسان آندولن میں  اپنی جان گنوا دینے والے کسانوں کو مسلم تنظیموں کی جانب سے ممبئی کے متعدد علاقوں میں  ۱۵؍ جنوری بعد نماز جمعہ مہلوکین کو  خراج عقیدت   اور کسانوں کے ساتھ اظہار ہمدردی کیلئے تیاری کی جارہی ہے ۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے دعویٰ کیا کہ ممبئی باغ کی طرز پر ممبئی اور ریاست کی  متعدد مسلم تنظیموں  نے ۱۵؍جنوری کو بعد نماز جمعہ ملک گیر کسان آندولن کی حمایت میں پر امن علامتی کسان باغ بناکر کسان آندولن کے دوران  ۷۰؍ سے زائد مہلوکین کو خراج عقیدت   پیش کرنے  اور ان کے ساتھ  اظہار یکجہتی کا اعلان کیا گیا۔ اس تحریک کو مزید قوت پہنچانے کیلئے گوونڈی  کےباجی  پربھو دیش پانڈے مارگ ، گیتا وکاس پولیس چوکی سےقریب کارگل چوک پر  موم  بتی جلاکر مہلوک کسانوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کا پروگرام بنایا گیا ہے ۔کسان سہیوگ سمیتی کی جانب سے کووڈ ۱۹ ؍ کے پیش نظرتمام احتیاطی تدابیر اپناتے ہوئے  پروگرام منعقد کرنے کی درخواست پولیس سے کی گئی تھی۔  اس کے بعد سینئر پولیس انسپکٹر نے ۱۴۹؍ کا نوٹس  دیا ۔
  گوونڈی کسان باغ کے نگراں علیم  عالم شیخ اور ان کے ساتھی ڈاکٹر سلیم خان نے بتایا کہ سینئر انسپکٹر   شری کشور گائیکے نے کووڈ ۱۹ اور دفعہ ۱۴۴؍کا حوالے دیتے ہوئے ممبئی میں کورونا پھیلنے کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے گوونڈی کارگل چوک  پرکسان باغ میں خراج عقیدت کے پروگرام پر پابندی  لگاتے ہوئے نوٹس جاری کیا ہے ۔  انھوں نے بتایا کہ  اس تحریک سے جڑے شیوسینا کے۲؍مقامی لیڈران اختر شیخ اور محسن خان کو بھی نوٹس جاری  کیا گیا ہے جبکہ ہمارا  یہ پروگرام کم سے کم  افراد پر مشتمل نہایت پر امن  طریقے سے    ہاتھوں اور سر پر کالی  پٹیاں باندھ کر  ترنگا جھنڈا اورچھوٹے پودے ( شجر) ہاتھوں میں لئے ہیومن چین بناکر اور موم بتیاں جلاکر کسانوں سے یکجہتی کا اظہار  کرنے پر مشتمل  ہے جس کی تحریری پیشگی اطلاع ہم نےشیواجی نگر پولیس اسٹیشن کو دی تھی اور پولیس کی رضامندی  کے بعد پروگرام منعقد کیا  جارہا ہے ۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ   اب  بغیر  اطلاع اچانک نوٹس دے کر ہمارا حق چھیننے  اور  جمہوریت کو کچلنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔  اس بارے میں  ڈاکٹر تنویر انصاری اور سلیم باس نے بتایا کہ۹؍ جنوری کو سینئر انسپکٹر گائیکے سے  اس پروگرام کے سلسلے میں تفصیلی گفتگو ہوئی تھی  اور زبانی اجازت کے بعد ہم نے ۱۱؍ جنواری کو ان سے تحریری اجازت کا مطالبہ کیا  تھا۔  اس کے بعد پولیس اہلکاروں کے ذریعے ہم کو شیواجی نگر پولیس اسٹیشن میں میٹنگ کے بہانے بلایا گیا اور نوٹس دینے کے بعد قانونی کارروائی کرنےکا انتباہ دیا گیا ۔   ہمیں آزاد میدان جاکر احتجاج کرنے کو کہا  گیا ۔ اس ضمن میں سینئر انسپکٹر کشور گائیکے سے بھی گفتگو کی کوشش کی گئی لیکن کامیابی نہیں ملی۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK