بمراہ زخمی ہونے کی وجہ سے چوتھے ٹیسٹ سے باہر

Updated: January 13, 2021, 9:07 AM IST | Agency | Sydney

پیٹ میں تکلیف کے سبب ٹیم انڈیا کے تیز گیندباز کا چوتھے ٹیسٹ میں نہیں کھیلنے کا فیصلہ۔ ہندوستان زخمی کھلاڑیوں سے پریشان

Jasprit Bumrah.Picture :INN
جسپریت بمراہ۔ تصویر:آئی این این

زخمی کھلاڑیوں کے حوالے سے ہندوستان کی مشکلیں بڑھتی جا رہی ہیں اور اب اس کے اہم تیز گیندباز جسپریت بمراہ پیٹ میں کھینچاؤ کے سبب آسٹریلیا کے خلاف۱۵؍ جنوری ۲۰۲۱ءسے برسبین میں ہونے والے چوتھے اور آخری ٹیسٹ سے باہر ہو گئے  ہیں۔   ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) نے پیر کی رات بیان جاری کرکے بتایا تھا کہ آل راؤنڈر رویندر جڈیجا اپنے بائیں ہاتھ کے انگوٹھے کی ہڈی ٹوٹنے کے سبب چوتھے ٹیسٹ سے باہر ہو گئے ہیں۔ اسی کے اگلے دن اب یہ خبر آ رہی ہے کہ بمراہ بھی چوتھے ٹیسٹ سے باہر ہو گئے ہیں۔ سمجھا جاتا ہے کہ ہندوستانی ٹیم مینجمنٹ  بمراہ کے حوالے سے کوئی جوکھم نہیں اٹھانا چاہتا ہے جن کے پیٹ کی عضلات میں کھینچاؤ ہے۔ بمراہ اس کھینچاؤ کے سبب سڈنی میں تیسرے ٹیسٹ کی دوسری اننگز  میں پریشان بھی نظر آئے تھے۔  جسپریت بمراہ کے علاوہ ہندوستان کے  بلے باز مینک اگروال کی فٹنیس کے حوالے سے  فکرمند ہے جنہیں میلبورن میں نیٹس میں چوٹ لگ گئی تھی۔ علاوہ ازیں آف اسپنر آر اشون اور بلے باز ہنوما وہاری کی فٹنیس کے حوالے سے بھی تشویش قائم ہے۔ اشون کی پیٹھ میں کھینچاؤ ہے اور انہیں سڈنی ٹیسٹ میں پسلیوں میں شارٹ پچ گیند بھی لگ گئی تھی جبکہ ہنوماوہاری کو ہَیمسٹرنگ چوٹ ہے جو انہیں سڈنی میں دوسری اننگز میں میں ایک رن  لیتے وقت لگی تھی۔  اشون اور ہنوما نے چوٹ کے باوجود سڈنی میں معاون بلے بازی کی تھی اور  ۴۰؍سے زائد اوور تک بلے بازی کر کے میچ  ڈرا کروایا تھا۔ تیز گیندباز جسپریت بمراہ تیسرے ہندوستانی گیندباز ہیں جو سیریز کے دوران زخمی ہوئے ہیں۔ محمد سمیع ایڈیلیڈ میں پہلے ٹیسٹ میں اور امیش یادو میلبورن میں دوسرے ٹیسٹ میں زخمی ہو کر سیریز سے باہر ہو گئے تھے۔  علاوہ ازیں بلے باز ایل راہل نیٹ پریکٹس میں کلائی میں چوٹ لگنے کے سبب سیریز سے باہر ہو گئے اور انھیں وطن لوٹنا پڑاتھا۔ زخمی کھلاڑیوں کی فہرست میں اب بمرا ہ کا نام شامل ہو گیا ہے۔  ہندوستان کے پاس تیز گیندبازوں میں اب محمد سراج اور نودیپ سینی  کے علاوہ شاردل ٹھاکر اور ٹی نٹراجن رہ گئے ہیں۔ سراج کے پاس دو ٹیسٹ اور سینی کے پاس ایک ٹیسٹ کا تجربہ ہے۔ ٹھاکر نے اپنا واحد ٹیسٹ۲۰۱۸ء میں کھیلا تھا جبکہ بائیں ہاتھ کے تیز گیندباز نٹراجن کو اپنا ٹیسٹ ڈیبیو کرنا ہے۔ 

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK