ٹی ۲۰؍ ورلڈ کپ کی میزبانی کے تعلق سےحتمی فیصلےکیلئےہندوستان کو ۲۸؍جون تک کی مہلت

Updated: June 03, 2021, 2:27 PM IST | Agency | New Delhi

اس سال اکتوبر-نومبر میں ٹی ۲۰؍ ورلڈ کپ ٹورنامنٹ کا انعقاد ہندوستان میں ہونا ہے۔آئی سی سی بورڈ اگلے سال فروری اور جون میں بھی ونڈو تلاش کررہا ہے

Sourav Ganguly. Picture:INN
سوروگنگولی۔تصویر :آئی این این

آئی سی سی نے بی سی سی آئی کو  ہندوستان میں کورونا بحران کے درمیان ٹی ۲۰؍ ورلڈ کپ کی میزبانی سے متعلق فیصلہ کرنے کے لئے۲۸؍ جون تک کی مہلت دی ہے۔ منگل کو منعقدہ آئی سی سی بورڈ کے آن لائن اجلاس میں ہندوستان کی نمائندگی بی سی سی آئی کے صدر سورو گنگولی اور سکریٹری جئے شاہ نے کی۔ اس سال اکتوبر۔نومبر میں ٹی۲۰؍ ورلڈ کپ کا انعقاد ہونا ہے۔بی سی سی آئی نے ایک ماہ کا وقت مانگا تھا  جسے آئی سی سی بورڈ نے متفقہ طور پر دے دیا ۔ آئی سی سی بورڈ کے قریبی ذرائع نے بتایا’’ہاں ، آئی سی سی بورڈ نے بی سی سی آئی کی درخواست قبول کرلی ہے اور انہیں ہندوستان میں ٹی۲۰؍ ورلڈ کپ کی میزبانی سے متعلق ۲۸؍ جون تک فیصلہ کرنا ہوگا۔ وہ اگلے ماہ ٹھوس منصوبہ بندی کے ساتھ  واپس  آئیں گے۔‘‘
 اگر بی سی سی آئی ٹورنامنٹ کی میزبانی کرنے سے قاصر ہے تو اس کا انعقاد متحدہ عرب امارات (متحدہ عرب امارات) میں ہوگا۔ اس سے پہلے آئی پی ایل ہونا ہے  جو۱۰؍ اکتوبر تک جاری رہے گا۔ ایسی صورتحال میں میزبانی کے حقوق بی سی سی آئی کے پاس رہ سکتے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی آئی سی سی بورڈ عمان کے شہرمسقط کو متبادل مقام کے طور پر بھی دیکھ رہا ہے اور وہ ٹی ۲۰؍ورلڈ کپ کے ابتدائی راؤنڈ میچوں کا انعقاد وہاں کرواسکتا ہے۔
   اکتوبر  اور نومبر میں اگر ممکن نہ ہوا تو وہ ۲۰۲۲ء میں بھی ونڈو تلاش کر رہا ہے۔ آئی سی سی بورڈ کے ایک ممبر نے کہا’’بی سی سی آئی ہندوستان میں عالمی ٹورنامنٹ کی میزبانی کرنا چاہتا ہے۔ وہ اس موقع سے محروم نہیں ہونا چاہتے ہیں۔ آئی سی سی بورڈ مزید ۲؍ ونڈوز تلاش کر رہا ہے۔ ایک یکم فروری۲۰۲۲ء  ہے ، لیکن ویمنز ون ڈے ورلڈ کپ بھی اسی وقت ہونا ہے۔ دوسرا متبادل  اگلے آئی پی ایل کے بعد جون میں ہے لیکن ایسے شہروں کو ڈھونڈنا ہوگا جہاں مانسون  کا اثر نہیں پڑے گا۔ آسٹریلیا کو ۴؍ ماہ کے اندر ایک اور ٹی ۲۰؍ورلڈ کپ کروانا ہے۔ 

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK