سری لنکن کرکٹ ٹیم میں اختلافات کا دھواں اٹھنے لگا

Updated: January 13, 2020, 8:03 pm IST | Colombo

سری لنکا ٹیم میں اختلافات کا دھواں اٹھنے لگا۔ لست ملنگا نے کپتانی چھوڑنے کا عندیہ دے دیا۔ وہ کہتے ہیں کہ میں کسی بھی وقت قیادت سے مستعفی ہونے کو تیار ہوں۔ ہندوستان میں ۳؍ٹی ۲۰؍ میچوں کی سیریز میں صفر۔۲؍سے شکست کے بعد سری لنکا ٹیم میں اختلافات کی خبریں سامنے آنے لگیں۔

سری لنکن کرکٹ ٹیم میں اختلافات کا دھواں اٹھنے لگا
لست ملنگا۔ تصویر: پی ٹی آئی

 کولمبو(ایجنسی): سری لنکا ٹیم میں اختلافات کا دھواں اٹھنے لگا۔ لست ملنگا نے کپتانی چھوڑنے کا عندیہ دے دیا۔ وہ کہتے ہیں کہ میں کسی بھی وقت قیادت سے مستعفی ہونے کو تیار ہوں۔ ہندوستان میں ۳؍ٹی ۲۰؍ میچوں کی سیریز میں صفر۔۲؍سے شکست کے بعد سری لنکا ٹیم میں اختلافات کی خبریں سامنے آنے لگیں۔ رپورٹس میں دعویٰ کیا جارہا ہے کہ ملنگاکی قیادت میں سب کچھ اچھا نہیں چل رہا، کھلاڑیوں میں کافی اختلافات پائے جاتے ہیں۔ خود ملنگا نے سابق کپتانوں تشارا پریرا اور انجیلو میتھیوز کو سائیڈ لائن کئے رکھا۔ ملنگا نے ہندوستان کے ہاتھوں شکست کی ذمہ داری قبول کی تھی، وہ دونوں میچوں میں ایک بھی وکٹ حاصل نہیں کرپائے تھے، وطن لوٹنے پر بھی انہوں نے میڈیا سے بات چیت میں ذمہ داری قبول کی تاہم ساتھ میں واضح کیا کہ سری لنکا کے بولرس حریف ٹیم کو کم اسکور پر محدود کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکے جبکہ بلے باز بھی بڑا اسکور بنانے میں ناکام رہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسی ٹیم جوکہ عالمی رینکنگ میں ۹؍ویں نمبر پر ہو، اس سے فوری فتوحات کی امید بھی نہیں کی جاسکتی۔ ملنگا نے واضح کیا کہ وہ ٹیم کی خراب کارکردگی کی ذمہ داری قبول کرنے اور کسی بھی وقت مستعفی ہونے کو تیار ہیں۔ یاد رہے کہ لست ملنگا کی ہی قیادت میں سری لنکا نے۲۰۱۴ءمیں ٹی ۲۰؍ ورلڈ کپ جیتا تھا اور وہ ۲۰۱۶ء تک اس ذمہ داری پر قائم رہے، بعد ازاں انہیں دسمبر۲۰۱۸ء میں حیران کن طور پر اس وقت کپتان بنایا گیا جب وہ ٹیم کا حصہ بھی نہیں تھے۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK