Inquilab Logo

ٹام آلٹر ڈائیلاگ متاثرکن اور منفرد لب ولہجہ کے ساتھ اداکرتے تھے

Updated: June 25, 2024, 10:22 AM IST | Inquilab News Network | Mumbai

ٹام آلٹر کو بھلے ہی کوئی ان کے نام سے نہ جانتا ہوں لیکن بالی ووڈ مداحوں کے ذہن میں ٹام آلٹر کی پہنچان ایسے اداکار کے طور پر ہے جوبالی ووڈ فلموں میں زیادہ تر انگریز کا کردار ادا کرتا تھا۔ 

Tom Alter. Photo: INN
ٹام آلٹر۔ تصویر : آئی این این

ٹام آلٹر کو بھلے ہی کوئی ان کے نام سے نہ جانتا ہوں لیکن بالی ووڈ مداحوں کے ذہن میں ٹام آلٹر کی پہنچان ایسے اداکار کے طور پر ہے جوبالی ووڈ فلموں میں زیادہ تر انگریز کا کردار ادا کرتا تھا۔ 
ان کی پیدائش۲۲؍ جون۱۹۵۰ء کو اتراکھنڈ کے مسوری میں ہوئی۔ ٹام ۱۸؍ برس کی عمر تعلیم کی غرض سے امریکہ چلے گئے لیکن ان کا دل نہیں لگا اور وہ درمیان ہی میں وہاں سے لوٹ آئے۔ اس کے بعد انہوں نے کئی نوکریاں کیں۔ انہوں نے ۶؍ مہینے تکہریانہ کے سینٹ تھامس اسکول میں ٹیچر کی بھی نوکری کی۔ 
 سپراسٹار راجیش کھنہ کی۱۹۶۹ء کی فلم ارادھنا نے ٹام آلٹر کو اتنا متاثر کیا کہ اب بس وہ راجیش کھنہ بننا چاہتے تھے۔ اسی ہفتے انہوں نے اس فلم کو ۳؍ مرتبہ دیکھا۔ ۲؍سال تک انکے ذہن میں راجیش کھنہ اور شرمیلا ٹیگو چلتی رہیں۔ انہوں نے۲۰۰۹ءمیں ایک انٹرویو کے دوران کہا تھا، ’’میں راجیش کھنہ کا بہت بڑا فین رہا اور۷۰ءکی دہائی میں ان کے جیسا ہیروبننا چاہتاتھا، وہ میرے ہیروتھے۔ ان کا رومانی انداز دل کو چھولیتا تھا۔ ‘‘
  ہیرو بننے کا خواب لے کر ٹام آلٹر نے پونے میں ہندوستانی فلم اور ٹیلی ویژن انسٹی ٹیوٹ میں داخلہ لیا۔ ٹام نے۱۹۷۴ء میں ایف ٹی آئی آئی سے گریجویشن کے دوران گولڈ میڈل حاصل کیا۔ اسی دوران انہوں نے نصیر الدین شاہ اور بنجامن گیلانی کے ساتھ ایک کمپنی موٹلی قائم کی اور ڈرامے کی دنیا میں قدم رکھا۔ ڈرامے میں انہوں نے مرزا غالب پر اسی نام کے ڈرامے اور مولانا عبدالکلام آزاد پر مبنی ڈراما’ مولانا‘ میں شاندار کردارا دا کئے جس کے لئے انہیں ہمیشہ یا د رکھا جائے گا۔ ٹام الٹر کو مشہور ٹی وی شو جنون میں ان کے کردار کیشوکلسی کیلئے جانا جاتا ہے۔ ۱۹۹۰ء میں یہ شو مسلسل ۵؍ سال تک چلا۔ اس طرح ڈراما، فلم اور ٹی وی شومیں وہ چھائے رہے۔ اردوکے ڈائیلاگ متاثرکن اور منفرد لب ولہجہ کے ساتھ اداکرتے تھے اور ان کا تلفظ بھی بہترین تھا، ادب وشاعری سے بھی دلچسپی رکھتے رہے۔ 
 ٹام آلٹر نے بالی ووڈ میں اپنے کریئر کی شروعات۱۹۷۶ء میں فلم چرس سے کی۔ ۱۹۷۷ء میں انہوں نے کیرول ایوانس سے شادی کی۔ ان کا ایک بیٹا جیمی اور ایک بیٹی افشاں ہے۔ فلم چرس کے بعد انہوں نے شطرنج کے کھلاڑی، دیش پریمی، کرانتی، گاندھی، رام تیری گنگا میلی، کرما، سلیم لنگڑے پہ مت رو، پرندہ، عاشقی، جنون، ویر زرا اور منگل پانڈے سمیت ۳؍سو سے زائد فلمو ں میں اپنی کارکردگی کامظاہرہ کیا۔ ٹام آلٹر نے اپنے کریئر کے دوران ستیہ جیت رے سے لے کر شیام بینگال تک فلم انڈسٹری میں تقریباً چوٹی کے تمام ہدایت کاروں کے ساتھ کام کیا۔ 
 انہوں نے کئی بے حد معروف سیریل میں بھی کام کیا جس میں ہندوستان ایک کھوج، زبان سنبھال کے، بیتال پچیسی، حاتم اور یہاں کے ہم سکندر اہم ہیں۔ ۱۹۸۰ءسے۱۹۹۰ء تک کے دوران ٹام الٹر اسپورٹس کے صحافی بھی رہے۔ وہ ٹی وی پر سچن تندولکر کا انٹرویو لینے والے پہلے شخص تھے۔ ۲۰۰۸ءمیں انہیں فن اور سنیما کے شعبے میں بہترین خدمات کیلئے پدم شری ایوارڈ بھی دیا گیا تھا۔ انہوں نے تین کتابیں بھی تصنیف کیں۔ 
ٹام الٹر ایک امریکی عیسائی مشنری فیملی سے تعلق رکھتے تھے، ان کے دادا۱۹۱۶ءمیں امریکہ کے اوہیو سے ہندوستان تشریف لائے اور مدراس پہنچنے کے بعد انہوں نے ریل گاڑی سے لاہور تک کا سفرکیا۔ ان کے والد کی پیدائش سیالکوٹ میں ہوئی جوکہ اب پاکستان کا حصہ ہے۔ ۱۹۴۷ء میں تقسیم کے بعدان کے دادا پاکستان میں رہ گئے اور والد ہندوستان آگئے۔ 

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK