چین کا سب سے بڑا الیکٹرانکس ہول سیل مارکیٹ عارضی طورپر بند

Updated: September 06, 2022, 11:46 AM IST | Agency | Beijing

چین میں ایک بار پھر کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے معاملوں کو دیکھتے ہوئے وبا کی تازہ لہر کا اندیشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔

China`s wholesale market is shutting down.Picture:Agency
چین کا ہول سیل مارکیٹ بند رکھائی دے رہا ہے ۔ تصویر: ایجنسی

 چین میں ایک بار پھر کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے معاملوں کو دیکھتے ہوئے وبا کی تازہ لہر کا اندیشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔ حکومت نے بڑھتے قہر کو روکنے کیلئے لاک ڈاؤن کے حصے کی شکل میں شینزین کے جنوبی ٹیکنالوجی سینٹر ہواکیانگ بیئی میں واقع دنیا کے سب سے بڑے الیکٹرانکس ہول سیل مارکیٹ کو چار دنوں کیلئے بند کر دیا ہے۔ ساؤتھ چائنا مارننگ پوسٹ نے بتایا کہ ہواکیانگ بیئی میں کاروباری سرگرمی کی معطلی شینزین حکومت کے ذریعہ وبا کو روکنے کیلئے شروع وسیع ترکیبوں کی ایک سیریز کا حصہ ہے۔ حالانکہ بند ہونے سے نئے مسائل پیدا ہو گئے ہیں، کیونکہ ہائی ٹیک صنعت  کا ۲۰۲۰ء میں شینزین کی مجموعی ملکی پیداوار میں ۲۰؍ فیصد حصہ تھا۔ایک عالمی الیکٹرانکس سورسنگ سینٹر ہواکیانگ بیئی ضلع کو پیر سے جمعرات تک بند کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔ سپرمارکیٹ، ریستوراں اور فارمیسی جیسے ضروری کاروباروں کو چھوڑ کر متاثرہ سیکٹرس کی سبھی دکانوں کو بند کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ’’ریستوراں کو صرف ٹیک اَوے (پارسل)فراہم کرنے کی اجازت ہے۔ سبھی ڈائن اِن سروسز کو معطل کر دیا گیا ہے۔‘‘۱ء۷؍ کروڑسے زیادہ کے شہر شینزین نے مارچ میں ایک ہفتہ کے اندر کورونا وائرس کے قہر کو روکنے میں کامیابی حاصل کی اور اسے اثردار حکومت کے ایک ماڈل کی شکل میں مشہور کیا گیا۔ مقامی رپورٹ کے مطابق پیر کو شینزین میں کورونا وائرس  کے ۱۱؍ مصدقہ معاملوں کا پتہ چلا، جس سے ۲۴؍ میٹرو اسٹیشنوں کو بند کر دیا گیا اور فوٹین ضلع میں لاک ڈاؤن لگا دیا گیا۔ لوؤہو میں گوئیان، ننھو اور سنگنگ علاقوں میں بھی مکمل لاک ڈاؤن لگا دیا گیا ہے۔ کئی علاقوں میں اسکول بند کر دیئے گئے اور آن لائن تعلیم شروع کر دی گئی ہیں۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK