الیکسی نوولنی معاملہ پر یورپی یونین کی جانب سے روس پرپابندی کا امکان

Updated: January 28, 2021, 1:33 PM IST | Agency | Athene

یوروپی یونین نے کہا ہے کہ وہ روس میں حزب اختلاف کے رہنما الیکسی نوولنی کی گرفتاری کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال کی نگرانی کر رہا ہے ، جس کے لئے فروری میں روس پر پابندی عائد ہوسکتی ہے۔ یہ بات یونان کے وزیر خارجہ نکوس ڈینڈیس نے بدھ کے روز ایک انٹرویو میں کہی۔  ڈنڈیاس نے یوروونیوز کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں کہا کہ یوروپی یونین کے متعدد ممبر ممالک نے نوولنی کے حوالہ سے روس پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا تھا ، لیکن اس کے باوجود یوروپی یونین اب تک روسی حکام پر پابندی عائد کرنے سے گریز کرتارہا ہے۔

Alexei Navalny - Pic : INN
الیکسی نوولنی ۔ تصویر : آئی این این

یوروپی یونین نے کہا ہے کہ وہ روس میں حزب اختلاف کے رہنما الیکسی نوولنی کی گرفتاری کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال کی نگرانی کر رہا ہے ، جس کے لئے فروری میں روس پر پابندی عائد ہوسکتی ہے۔
یہ بات یونان کے وزیر خارجہ نکوس ڈینڈیس نے بدھ کے روز ایک انٹرویو میں کہی۔
 ڈنڈیاس نے یوروونیوز کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں کہا کہ یوروپی یونین کے متعدد ممبر ممالک نے نوولنی کے حوالہ سے روس پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا تھا ، لیکن اس کے باوجود یوروپی یونین اب تک روسی حکام پر پابندی عائد کرنے سے گریز کرتارہا ہے۔
یونانی وزیر خارجہ نے کہا’’یوروپی یونین کے خارجہ پالیسی محکمہ کے سربراہ جوزیف بوریل سمیت متعدد ممبر ممالک نے روس کو اس معاملے میں ایک اور موقع دینے کا خیال  ظاہرکیا ہے۔ ہم اگلے ۳۰؍ دنوں میں اس مسئلے پر غور کریں گے۔ ‘‘
قابل ذکر بات یہ ہے کہ  نوولنی  کے حامیوں نے گذشتہ ہفتے روس کے حزب اختلاف کے رہنما کی گرفتاری کے خلاف ملک کے متعدد حصوں میں احتجاج کیا تھا۔ اس حوالہ سے حکومت نے  متنبہ کیا ہے کہ ان مظاہروں میں حصہ لینے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK