پرگتی میدان کی سرنگ میں پینٹنگ دیکھ کر وزیراعظم دنگ رہ گئے

Updated: June 20, 2022, 1:12 PM IST | Agency | New Delhi

دنیا کی ممکنہ طور پر سب سے بڑی آرٹ گیلری قرار دیا،اتوار کے روز روڈ کو ٹریفک کیلئے بند کرکےسیاحوں کیلئے کھولنے کا مشورہ دیا

Prime Minister Modi picks up trash in a new tunnel.Picture:INN
وزیراعظم مودی نئی سرنگ میں پڑے کوڑے کو اٹھاتے ہوئے۔ تصویر: آئی این این

وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ وہ راجدھانی کے پرگتی میدان علاقے میں نو تعمیر شدہ انٹیگریٹڈ انڈر گراؤنڈ روڈ کے دونوں اطراف کی دیواروں پر پینٹنگز دیکھ کر بہت خوش ہوئے۔اسے ممکنہ طورپردنیا کی سب سے بڑی آرٹ گیلری قرار دیتے ہوئے،انہوں نے تجویز پیش کی کہ اسے اتوار کو ۴؍ سے۶؍گھنٹے دیکھنے والوں کے لیے کھلا رکھنے کے بارےمیںسوچا جانا چاہیے تاکہ لوگ ہندوستان کے تنوع کی خوبصورت جھانکی سے لطف اندوز ہو سکیں۔ مودی۹۲۰؍کروڑ روپے سے زیادہ کی لاگت سے تیار کردہ ٹنل سڑکوں کے نیٹ ورک کا باضابطہ افتتاح کرنے کے بعد اجتماع سے خطاب کر رہے تھے۔ مودی نےکہا، ’’مجھے سرنگ کا راستہ دیکھنے کے لیے ایک کھلی جیپ کی سہولت دی گئی تھی لیکن میں اندر کی پینٹنگ دیکھنے کے لیے اس سے نیچے اترا اور وہاں بنی پینٹنگ کو بہت قریب سے دیکھنے لگا اس لئےمجھے یہاں میٹنگ میں پہنچنےمیں۱۰؍تا ۱۵؍منٹ کی تاخیر ہوگئی۔‘‘مودی نےسرنگ کے راستے میں فنکارانہ مناظر کی تعریف کرتے ہوئےکہا، ’’میں قطعی طور پر نہیں کہہ سکتالیکن یہ شاید دنیا کی سب سے طویل آرٹ گیلری ہے۔میں حکام کو مشورہ دینا چاہوں گا کہ وہ ہر اتوار کو اس وقت جب ٹریفک کم ہو، وہاں اس زیر زمین گزرگاہ کی گیلری کوسیاحوں کیلئے کھولا جائےاور گاڑیوں کی آمدورفت بند رکھی جائے۔ مودی نےکہا کہ اس سرنگ میں بنائی گئی پینٹنگز ’ایک بھارت شریشٹھ بھارت‘کی مثالیں ہیں۔ اس میں غیر ملکی شمال مشرق میں ناگالینڈ سے لے کر جنوب میں کیرالہ تک پورے ہندوستان کے سماجی، ثقافتی اور قدرتی تنوع کی جھانکی بھی دیکھ سکتے ہیں۔مودی نے کہا، ’’یہ واقعی ایک بہت ہی خوبصورت اور موثر تجربہ ہے۔ میں وزارت خارجہ سے کہوں گا کہ وہ غیر ملکی سفارت کاروں کو دہلی کا دورہ کرنے کے بارے میں سوچے۔ میں ارکان پارلیمنٹ سے بھی یہی پوچھوں گا۔ انہوں نے کہا کہ اسے اسکول کے بچوں کو بھی دکھانےکا ایک نظام ہونا چاہیے اور اس میں لوگوں کو معلومات دینے کے خود ہدایت شدہ ڈیجیٹل سسٹم کی بھی سہولت فراہم کی جا سکتی ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ گجرات کے وزیر اعلیٰ کے طور پر، انہوں نے احمد آباد میں ایک بھیڑ والی سڑک کو ہر اتوار کو گاڑیوںکی آمد و رفت کے لیے بند رکھنے کی مشق شروع کی تھی تاکہ بچے سڑک پرآزادانہ طورپرکرکٹ اوردیگر کھیلوں سے لطف اندوزہو سکیں۔ تاکہ بچوں کو بھی احساس ہو کہ ان کا بھی شہر میں کوئی مقام ہے۔مودی نے کہا کہ ’’حکومت ہند اس بات کو یقینی بنانے کے لیےمسلسل کام کر رہی ہے کہ ملک کی راجدھانی میں جدید ترین سہولیات ہوں، عالمی معیار کی تقریبات کے لیے نمائشی کمرے ہوں۔‘‘ انہوں نے کہا کہ گزشتہ ۸؍برسوں میں ہم نے دہلی-این سی آر کے مسائل کو حل کرنے کے لئے بے مثال اقدامات کئے ہیں۔ اس مدت کے دوران دہلی- این سی آر میں میٹرو سروس ۱۹۳؍ کلومیٹر سے بڑھ کر ۴۰۰؍کلومیٹر ہو گئی ہے۔مودی نے کہا کہ یہ پرگتی میدان دہائیوں پہلےہندوستان کی ترقی، ہندوستانیوں کی طاقت، ہندوستان میں بنی اشیاء اور ہندوستان کی ثقافت کی جھانکی کو پیش کرنے کے لیے بنایا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK