آسٹریلیا کے دورے تک سب کچھ ٹھیک ہوجائےگا: روہت

Updated: November 22, 2020, 5:50 AM IST | Agency | New Delhi

ہندوستانی ٹیم کے افتتاحی بلے باز نے کہا : ہیمسٹرنگ کی انجری ٹھیک ہورہی ہے اور میں نے بی سی سی آئی اور ممبئی انڈینس کو چوٹ کے بارے میں بتایاہے

Rohit Sharma - Pic : INN
روہت شرما ۔ تصویر : آئی این این

ہندوستان کی سفید بال ٹیم کے نائب کپتان  روہت شرما بھی اپنی ہیمسٹرنگ چوٹ سے دل لگی اور الجھن میں تھے کیونکہ انہیں ہمیشہ معلوم تھا کہ چوٹ اتنی سنگین نہیں ہے اور وہ آسٹریلیا کا دورہ کرنے والے ہیں۔ میں کھیلنے کے لئے تیار رہوں گا۔
 روہت کو آئی پی ایل کے دوران ہیمسٹرنگ کی چوٹ لگی تھی جس کی وجہ سے وہ رواں ماہ کے آغاز میں دورۂ آسٹریلیا کے لئے ٹیم سے باہر ہوگئے تھے۔ اس کے بعد روہت آئی پی ایل میں ممبئی انڈینس کی جانب  سے کھیلتے ہوئےنظرآئے   جس سے قیاس آرائی کا دور شروع ہوگیا۔ اس کے بعد انہیں ٹیسٹ ٹیم میں شامل کیا گیا۔
 روہت شرمانے سچ کہا’’ مجھے نہیں معلوم کہ کیا ہو رہا تھا اور لوگ کس کے بارے میں بات کر رہے تھے۔ لیکن میں ریکارڈ کے لئے یہ کہوں کہ میں بی سی سی آئی اور ممبئی انڈینس کے ساتھ مستقل رابطے میں تھا۔ انہوں نے دہلی کیپٹلس کے خلاف آئی پی ایل کے فائنل میں۵۰؍ گیندوں میں ۶۸؍ر ن بنائے ، درد کے باوجود کھیلتے رہے۔ وہ اس وقت آسٹریلیا جانے سے پہلے بنگلور میں نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں  فٹنیس  اور کنڈیشنگ کی تربیت لے رہے ہیں۔ روہت نے کہا’’ میں نے انہیں (ممبئی انڈینس) کہا تھا کہ میں میدان میں اتر سکتا ہوں کیونکہ یہ ایک چھوٹا سا فارمیٹ ہے اور میں حالات سے اچھی طرح نپٹوں گا۔ ایک بار جب میں نے یہ یقینی بنا لیا ہےکہ مجھے صرف اس پر توجہ دینے کی ضرورت ہے کہ میں کیا کرنا چاہتا ہوں۔‘‘
 انہوں نے کہا’’ ہیمسٹرنگ اب بالکل ٹھیک لگ رہی ہیں۔ اس کو اچھا کرنےکا عمل شروع ہوچکا ہے اور امید ہے کہ دورہ آسٹریلیا کے وقت سب کچھ ٹھیک ہوجائے گا۔ طویل فارمیٹ میں کھیلنے سے پہلے مجھے بالکل یہ یقینی بنانا ہوگا کہ کوئی کسر نہیں چھوڑی گئی تھی ، یہی وجہ ہے کہ میں این سی اے میں ہوں۔ پلے آف میں  چوٹ کے باوجود کھیلنے کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ میرے لئے پریشانی کی بات نہیں ہے اور   تیار تھا۔ 

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK