کچھوؤں کا عالمی دن ۲۳؍ مئی کو منایا جاتا ہے

Updated: May 28, 2021, 7:15 AM IST | Mumbai

کچھوؤں کا عالمی دن ’’ورلڈ ٹرٹل ڈے‘‘ ہر سال ۲۳؍ مئی کو منایا جاتا ہے۔اس دن کا مقصد دنیا بھر میں کچھوؤں کی اہمیت اور ان کے تحفظ کے حوالے سے شعور اجاگر کرنا ہے۔

Symbolic Image. Photo: INN
علامتی تصویر۔ تصویر: آئی این این

کچھوؤں کا عالمی دن ’’ورلڈ ٹرٹل ڈے‘‘ ہر سال ۲۳؍ مئی کو منایا جاتا ہے۔اس دن کا مقصد دنیا بھر میں کچھوؤں کی اہمیت اور ان کے تحفظ کے حوالے سے شعور اجاگر کرنا ہے۔ اس دن کو منانے کا آغاز ۲۰۰۰ء میں ہوا تھا۔ اس دن دنیا بھر میں مختلف پروگرام منعقد کئے جاتے ہیں جن میں تفریح کی غرض سے کچھوے کے کاسٹیوم پہن کر اس کی کہانی بھی بتائی جاتی ہے۔ کچھوا زمین پر پائے جانے والے سب سے قدیم ترین رینگنے والے جانداروں میں سے ایک ہے۔ ماہرین کے مطابق یہ لگ بھگ ۲۱؍ کروڑ سال قبل وجود میں آیا تھا۔ اس کی اوسط عمر بہت طویل ہوتی ہے۔ عام طور پر ایک کچھوے کی عمر ۳۰؍ تا ۵۰؍ ہوسکتی ہے۔ بعض کچھوے۱۰۰؍ سال کی عمر بھی پاتے ہیں ۔ واضح رہے کہ سمندری کچھوؤں میں سب سے طویل العمری کا ریکارڈ ۱۵۲؍ سال ہے۔انٹارکٹکا کے علاوہ کچھوا دنیا کے تمام براعظموں میں پایا جاتا ہے۔کچھوے انتہائی سرد موسم میں زندہ نہیں رہ سکتے ہیں ، یہی وجہ ہے کہ یہ برفیلے علاقوں میں نہیں پایا جاتا ۔ بدقسمتی سے اس وقت کچھوؤں کی زیادہ تر اقسام معدومی کے خطرے سے دو چار ہیں ۔عالمی ادارہ برائے تحفظ فطرت آئی یو سی این کے مطابق دنیا بھر میں کچھوؤں کی۳۰۰؍ میں سے۱۲۹؍ اقسام اپنی بقا کیلئے جدوجہد کر رہی ہیں ۔ یہ اقسام معمولی یا شدید قسم کے خطرات سے دو چار ہیں ۔کچھوؤں کی ممکنہ معدومی اور ان کی آبادی میں کمی کی وجوہات ان کا بے دریغ شکار، غیر قانونی تجارت، اور ان کی پناہ گاہوں میں کمی واقع ہونا ہے۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK