Inquilab Logo

روینہ ٹنڈن اور ان کے ڈرائیور پر خاتون پر حملہ کرنے کا الزام

Updated: June 02, 2024, 4:33 PM IST | Inquilab News Network | Mumbai

روینہ ٹنڈن اور ان کے ڈرائیور کا ہفتہ کی رات کھار کے کارٹر روڈ پر حادثہ کے بعد لوگوں کے ہجوم سے آمنا سامنا ہوا۔

Raveena Tandon. Photo: INN
روینہ ٹنڈن۔ تصویر: تصویر : آئی این این

 بالی ووڈ اداکارہ روینہ ٹنڈن اور ان کے ڈرائیور کا لوگوں کے ایک ہجوم  سےاس وقت سامنا ہوا جب ان کی کار نے سنیچر کی رات کھار میں کارٹر روڈ پر واقع ایک عمارت کے احاطے میں ایک خاتون کوٹکر ماردی۔
ممبئی پولیس کے ایک افسر نے بتایا کہ ڈرائیور نے مبینہ طور پر خاتون کو اس وقت کار سے ٹکر ماردی جب وہ گاڑی کو پارک کرنے کیلئے ریورس لے رہی تھی۔
 سوشل میڈیا پر بڑے پیمانے پر ویڈیو شیئر کیا جا رہا ہے،ویڈیوکلپ میں، سفید لباس میں ملبوس روینہ کو متاثرہ اور مقامی لوگوں نے گھیر لیا جنہوں نے ان پر حملہ کیا۔ انہیں پولیس کو فون کرتے ہوئے بھی دیکھا گیا، جب کہ ایک خاتون نے چیخ کر کہہ رہی ہے کہ ’’میری ناک سے خون بہہ رہا ہے۔ اس نے (روینہ) مجھ پر حملہ کیا۔روینہ کو ہجوم سے اس واقعہ کی ویڈیو ریکارڈ نہ کرنے کی درخواست کرتے ہوئے بھی دیکھا گیا۔ انہوںنے ہجوم سے درخواست کی  کہ وہ اسے نہ ماریں۔ انہوں نے کہاکہ ’’دھکا مت دو پلیز مجھے مت مارو۔‘‘کچھ لوگوں کو چیختے ہوئے سنا جا سکتا ہےکہ ’’مارو اسکو (اسے مارو)‘‘۔

 
 
 
 
 
View this post on Instagram
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 

A post shared by HT City (@htcity)

ایک  متاثرہ نے مزید دعویٰ کیا کہ روینہ نشے کی حالت میں اپنے ڈرائیور کا دفاع کرنے کے لئے کار سے باہر آئی اور ان کی ماں کو ٹکر ماری جس کے بعد ان کی والدہ کے سر پر شدید چوٹیں آئیں۔ تاہم یہ بھی بتایا جا رہا ہے کہ گاڑی نے کسی کو ٹکر نہیں ماری اور اداکار نے الزامات سے نمٹنے کے لئے وکیل سے رابطہ کیاہے۔ 

یہ بھی پڑھئے: سری لنکا: بارش سے متعلقہ حادثات میں ۱۴؍ ہلاکتیں

ویڈیو میں خاتون کے بیٹے، جس نے اپنی شناخت محمد کے طور پر کروائی، بتایا کہ یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب وہ اپنی ماں، بہن اور بھتیجی کے ساتھ ٹنڈن کے گھر کے قریب جا رہا تھا۔’’جب ہم نے  احتجاج کیا تو روینہ کے ڈرائیور نے میری بھانجی اور میری ماں پر حملہ کیا۔ روینہ ٹنڈن، جو خود نشے کی حالت میں تھیں، نے بھی باہر نکل کر (میری ماں اور بھانجی) کو وحشیانہ طریقے سے مارا۔ ہم یہاں گزشتہ چار گھنٹوں سے کھار پولیس اسٹیشن میں ہیں اور کوئی بھی شکایت درج نہیں کر رہا ہے اور اس کے بجائے یہ مشورہ دے رہے ہیں کہ وہ آکر تنازع طے کرلیں گے۔‘‘محمد نے ویڈیو میں کہا۔ واقعہ کے بعد دونوں فریق الگ الگ شکایات درج کروانے کے لئے کھار پولیس اسٹیشن پہنچے اور پولیس نے کہا کہ وہ بعد میں سمجھوتہ کرنے پر راضی ہوگئے۔ ڈپٹی کمشنر آف پولیس راج تلک روشن (زون ۹) نے کہا کہ ’’اب معاملہ حل ہو گیا ہے۔  فریقین  نے ہمیں تحریری طور پر بتایا ہے کہ وہ ایک دوسرے کے خلاف کوئی شکایت درج نہیں کروانا چاہتے۔‘‘ یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ واقعہ کے وقت روینہ نشے میں نہیں تھی۔ سی سی ٹی وی فوٹیج میں صاف نظر آرہا ہے کہ روینہ کی گاڑی سے کوئی زخمی نہیں ہوا۔ دراصل، ہجوم روینہ کے گھر کے اندر گھس گیا اور فریقین کے درمیان ہاتھا پائی ہوئی۔ بتایا جارہا ہے کہ بھیڑ روینہ اور ان کے ڈرائیور کے خلاف جارحانہ ہوگئی جس کے بعد روینہ نے اپنے ڈرائیور کو بچانے کی کوشش کی اور اس دوران فریقین میں ہاتھا پائی ہو گئی۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK