یوٹیوب نے دنیا بھر میں اسٹریمنگ کوالیٹی کا معیارکم کیا

Updated: March 26, 2020, 10:27 AM IST | Agency

یوٹیوب نے اب دنیا بھر میں اسٹریمنگ معیار کو گھٹانے کا اعلان کیا ہے۔بلومبرگ کی رپورٹ کے مطابق یہ فیصلہ یوٹیوب کی جانب سے اس وقت کیا گیا جب گزشتہ ہفتے اس نے یورپ کے صارفین کیلئے اسٹریمنگ کوالٹی کو کم کرنے کا اعلان کیا تھا تاکہ ’کووِڈ۱۹‘کے نتیجے میں گھروں تک محدود افراد کیلئے انٹرنیٹ اسپیڈ کو متاثر ہونے سے بچایا جاسکے

YouTube - Pic : INN
یوٹیوب ۔ تصویر : آئی این این

 یوٹیوب نے اب  دنیا بھر میں اسٹریمنگ معیار کو گھٹانے کا اعلان کیا ہے۔بلومبرگ کی رپورٹ کے مطابق یہ فیصلہ یوٹیوب کی جانب سے اس وقت کیا گیا جب گزشتہ ہفتے اس نے یورپ کے صارفین کیلئے   اسٹریمنگ کوالٹی کو کم کرنے کا اعلان کیا تھا تاکہ ’کووِڈ۱۹‘کے نتیجے میں گھروں تک محدود افراد کیلئے  انٹرنیٹ اسپیڈ کو متاثر ہونے سے بچایا جاسکے۔اب یوٹیوب میں بائی ڈیفالٹ ویڈیوز اسٹینڈرڈ ڈیفینیشن 480p پر پلے ہوں گی اور اس کا دورانیہ ایک ماہ کا ہوگا۔تاہم صارفین ویڈیوز کے ریزولوشن کو بڑھا سکیں گے مگر یہ کام مینوئلی ہی ہوسکے گا۔کمپنی نے بلومبرگ کو ایک بیان میں بتایا کہ ہم دنیا بھر میں حکومتوں اور نیٹ ورک آپریٹرز کے ساتھ کام کریں گے تاکہ اس صورتحال میں انٹرنیٹ پر دباؤ کو کم از کم کیا جاسکے۔ ویسے یوٹیوب واحد کمپنی نہیں جس کی جانب سے اسٹریمنگ کوالٹی کو کم کرکے براڈ بینڈ انٹرنیٹ پر دباؤ کم کیا گیا۔اس سے قبل نیٹ فلیکس نے بھی یورپ میں اسٹریمنگ کوالٹی کو۲۵؍ فیصد تک کم کیا جبکہ ایپل اور ایمیزون کی جانب سے یورپ میں ایسا کیا گیا۔نیٹ فلیکس کی جانب سے ہندوستان  میں بھی ایسا کرنے کا کہا گیا ہے جبکہ دیگر ممالک میں بھی مقامی انتظامیہ کی درخواست پر ایسا کرنے کی یقین دہانی کرائی گئی ہے۔دنیا بھر میں کورونا وائرس کے نتیجے میں گھر سے کام کرنے والے افراد کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے جس کے نتیجے میں براڈ بینڈ انٹرنیٹ اسپیڈ متعدد ممالک میں بری طرح متاثر ہوئی ہے۔ویڈیو اسٹریمنگ پلیٹ فارمز ہی اس سے متاثر نہیں ہوئے بلکہ سونی نے اعلان کیا ہے کہ وہ پلے اسٹیشن ڈاؤن کو یورپ میں سست کر رہی ہے تاکہ تمام برادری کے لیے انٹرنیٹ رسائی کو محفوظ رکھا جاسکے۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK