Inquilab Logo

’’دنیا میں غربت، عدم مساوات اور ناانصافیوں کا دور دورہ ہے‘‘

Updated: September 22, 2023, 1:09 PM IST | Agency | New York

امن کے عالمی دن پر انتونیو غطریس کا پیغام ،کہا: ہر طرف بداعتمادی، تقسیم اور تعصب پھیلا ہے۔

United Nations Secretary General Antonio Guterres. Photo. INN
اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو غطریس ۔ تصویر:آئی این این

امن کے عالمی دن پر اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو غطریس نے اپنے پیغام میں کہا ،’’ دنیا میں غربت، عدم مساوات اور ناانصافیوں کا دور دورہ ہے اور ہر طرف بداعتمادی، تقسیم اور تعصب پھیلا ہے۔ دنیا بھر میں تناؤ اور تنازعات کا خاتمہ کرنے کیلئے سفارت کاری، بات چیت اور تعاون کے کارآمد ذرائع سے کام لینا ہو گا۔‘‘سیکریٹری جنرل کا کہنا تھا ،’’ یہ دن ایسے موقع پر آیا ہے جب انسانوں اور زمین کو بحران کا سامنا ہے۔ جنگوں کے باعث ریکارڈ تعداد میں لوگ نقل مکانی پر مجبور ہیں ، جنگلوں میں خوفناک آگ لگی ہے، سیلاب آ رہے ہیں اور درجہ حرارت بڑھ رہا ہے۔‘‘
سیکریٹری جنرل نے کہا ،’’ دنیا بھر میں پائیدار ترقی کے اہداف کی جانب پیش رفت کی رفتار تیز کرنے اور یہ یقینی بنانے کی ضرورت ہے کہ کوئی پیچھے نہ رہے۔امسال اس دن کا موضوع یہ یاد دہانی کراتا ہے کہ امن خودبخود نہیں آتا بلکہ عملی اقدامات کا نتیجہ ہوتا ہے۔‘‘انہوں نے یہ بھی کہا،’’ اس مقصد کیلئے ہمیں کرہ ارض اور اس کی قدرتی نعمتوں کے خلاف اپنی جنگ کو روکنا ہو گا۔ہمیں ہر فرد کے انسانی حقوق اور وقار کو قائم رکھنے کیلئے اقدامات کرنےہوں گے جن کی اہمیت اس لئے بھی بڑھ گئی ہے کہ اس برس انسانی حقوق کے اعلامیہ کی منظوری کو۷۵؍ برس ہو گئے ہیں ۔ ہمیں ان لاکھوں افراد کی خاطر عملی اقدامات کرنے ہیں جو جنگ کی ہولناکیوں کا سامنا کر رہے ہیں ۔امن انسانیت کیلئے لازوال سرمایہ ہی نہیں بلکہ یہ عملی اقدامات کی تحریک بھی دیتا ہے۔ آئیے تمام امن کے قیام، اسے آگے بڑھانے اور اسے قائم رکھنے کا عہد کریں ۔‘‘
 قبل ازیں سیکریٹری جنرل نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کرتےہوئےکہاتھا ،’’ موسمی شدت کے واقعات کی رفتار تیز ہو رہی ہے اور انسانوں نے جہنم کے دروازے کھول دیئے ہیں ۔ کسان بے بسی سے اپنی فصلوں کو سیلاب کی نذر ہوتا دیکھ رہے ہیں ، بڑھتے ہوئے درجہ حرارت کے سبب موذی بیماریاں سامنے آ رہی ہیں اور جنگلوں میں لگنے والی اب تک کی غیرمعمولی آگ کے سبب بڑی تعداد میں لوگ نقل مکانی کر رہے ہیں ۔ ‘‘

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK