Inquilab Logo

فلسطینی باشندوں کو وقار اور تحفظ سے محروم رکھا جا رہا ہے: یونیسیف کے ترجمان جیمس ایلڈر

Updated: June 15, 2024, 10:03 PM IST | New Delhi

یونیسیف کے ترجمان جیمس ایلڈر نے غزہ میں اپنے دورے کے تعلق سے الجزیرہ سے بات چیت کے دوران کہا کہ غزہ میں جنگ کے دوران فلسطینی، خوفناک حالات کا سامنا کر رہے ہیں اور انہیں تحفظ، وقار اور امداد سے محروم رکھا جا رہا ہے۔

Palestanian facing shortage of food. Photo: X
فلسطینی جنگ کے دوران غذائی قلت کا سامنا کر رہے ہیں۔ تصویر: ایکس

یونیسیف کے ترجمان جیمس ایلڈر نے غزہ کے حالات کے تعلق سے کہاکہ ’’غزہ میں حالات خوفناک ہیں۔‘‘ انہوں نے الجزیرہ سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ’’یہ دل دہلا دینے والی بات ہے کہ محصور خطے میں حالات کو اس حد تک تباہ کن ہونے دیا گیا۔‘‘ انہوں نے غزہ میں اپنے دورے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ’’وہ غزہ کے دیر البلاح اسپتال کا دورہ کر رہے تھے۔ انہیں علی نام کا ایک چھوٹا بچہ ملا۔ جو کچھ دنوں قبل اپنے گھر میں سو رہاتھا جب ان کا گھر اسرائیلی حملے کی زد میں آگیا تھا۔

علی تین منزلے سے نیچے ملبے میں گرا تھا۔ میں نے اس کی والدہ سے بھی ملاقات کی جنہوں نے بتایا کہ علی کے دو بھائی بہن اسرائیلی حملے کے نتیجے میں جاںبحق ہوئے ہیں۔ اس بات کو ۲۵۰؍ دن کا عرصہ گزر گیا ہے۔ ‘‘ انہوں نے اسرائیلی حملوں کے نتیجے میں فلسطینیوں کے حاالات بیان کرتے ہوئے کہا کہ ’’فلسطینی سخت گرمی میں ۴۰؍ ڈگری میں اکٹھے خیموں میں رہنے پر مجبو رہیں۔ انہیں امداد، تحفظ اور وقار سے محروم رکھا جا رہا ہے۔‘‘

یہ بھی پڑھئے: سکم سیلاب: مرنے والوں کی تعداد ۹؍ ہوگئی، ۲؍ ہزار سے زائد سیاح پھنسے ہوئے ہیں

خیال رہے کہ اب تک اسرائیلی جارحیت کے نتیجے میں ۳۷؍ ہزار سے زائد فلسطینی جاں بحق جبکہ ۸۰؍ ہزار سے زائد زخمی ہو چکے ہیں۔اسرائیلی جارحیت کے نتیجے میں فلسطینی وسیع پیمانے پر غذائی قلت اور صاف پانی کی کمی کا سامنا کرنے پر مجبورہیں۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK