آج سے الجزائر میں عرب لیگ کی دوروزہ ۳۱؍ ویں سربراہی کانفرنس کا آغاز،تیاریاں مکمل

Updated: November 01, 2022, 11:30 AM IST | Agency | Cairo/Al Jazirah City

کانفرنس سے قبل رکن ممالک کے وزرائے خارجہ کا اجلاس ،’ الجزائر اعلامیہ‘ اور کانفرنس کے موضوعات پر تبادلۂ خیال۔عرب لیگ کے اسسٹنٹ سیکریٹری جنرل حسام ذکی کا تمام امور پر اتفاق رائے کا دعویٰ

A scene from the meeting of the foreign ministers of the Arab League before the conference..Picture:INN
کانفرنس سے قبل عرب لیگ کے وزرائے خارجہ کے اجلاس کا ایک منظر ۔ تصویر:آئی این این

  دوسال کے وقفے کے بعد آج ( منگل ) سے الجزائر  کے ’عالمی کانفرنس مرکز ‘ میں عرب لیگ کی دو روزہ ۳۱؍ویں سربراہی کانفرنس کا آغاز ہوگا ۔ اس کانفرنس میں رکن ممالک  کے سربراہ شرکت کریں گے۔  اس دوران  رکن ممالک کے مسائل پر گفتگو کی جائے گی۔ قبل ازیں رکن ممالک کے وزرائے خارجہ نے ایک اجلاس میں سربراہی کانفرنس کی تیاریوں کا جائزہ لیا اور اس کے موضوعات پر تبادلۂ خیال کیا۔     پیر کو میزبان ملک نے مہمانوں کا استقبال کیا۔عرب لیگ کے مصدقہ اکاؤنٹ سے مہمانوں کی آمد اور ان کے استقبال کی تصاویر ٹویٹ کی گئیں ۔  سربراہی کانفرنس کےمرکزی موضوعات سے متعلق وزرائے خارجہ کے اجلاس کے بعد یمن کے وزیر خارجہ  ڈاکٹر احمد عوض بن مبارك نےبتایا کہ الجزائرمیں ہونے والے عرب لیگ کی سربراہی کانفرنس  میں یمن کےمعاملے پر مکمل اتفاق رائےپایا جارہا ہے۔ وزرائے خارجہ کے اجلاس میں سربراہی کانفرنس کے تمام امور  پر گفتگو ہوئی ۔ اس دوران  یمن سے متعلق تمام عرب ممالک متحد  نظر آئے۔ میزبان ملک الجزائر کے وزیر خارجہ رامطان لعمامرا نے  بتایا کہ وزرائے خارجہ کا اجلاس نتیجہ خیز رہا  اور اس سے عرب لیگ سربراہی کانفرنس کو کامیاب  بنانے میں مددملے گی۔ دریں اثناء فلسطین کے وزیر خارجہ ریاض المالکی نے الجزائر کے صدر عبدالمجید تبون کی قیادت میں فلسطینیوں کے درمیان دوبارہ اتحاد میں ا ن کے ملک کے کردار کی تعریف کی۔ انہوں نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ الجزائر نے فلسطینیوں کو دوبارہ متحد کرنے کی کوشش کی ہے اور ہم اس کوشش پر الجزائر کےشکر گزار ہیں۔المالکی نے متوقع الجزائر اعلامیہ پر دستخط کرنے والے تمام  ممالک  پرزور دیا کہ وہ اسے عملی جامہ پہنانے کی کوشش کریں۔ عرب لیگ کے اسسٹنٹ سیکریٹری جنرل حسام ذکی نے  عرب وزرائے خارجہ کے اجلاس کے موقع پر اپنے بیان میں بتایا کہ تمام امور پر اتفاق رائے ہو گیا ہے۔ کسی بھی معاملے کو ٹالا نہیں  گیا ہے۔ سربراہی کانفرنس کے موضوعات پر اتفاق رائے پایا جاتا ہے۔حسام ذکی نےبتایا کہ متفقہ حکمت عملی  کے تحت غذائی تحفظ  سے متعلق  سوڈان کا  موقف سربراہی کانفرنس کے ایجنڈے میں شامل کیا گیا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ الجزائر اعلامیہ پر میزبان ملک اور دیگر ممالک کے درمیان مشورہ  کیا گیا تاکہ اسے مزید موثر بنایا جاسکے۔  واضح رہےکہ الجزائر اعلامیہ کانفرنس ختم مکمل ہونے کے بعد جاری کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK