ladakh

چین کو ہندوستان کی دوٹوک ، پینگانگ جھیل سے فوج نہیں ہٹے گی

سخت نگرانی اور فوری کارروائی کیلئے ہمہ وقت تیار ، حفاظتی ایجنسیوں نے چین کی نگرانی کیلئے ۶؍ خصوصی سیٹیلائٹ مانگے

August 07, 2020, 7:17 AM IST

ہند چین پانچویں راونڈ کی فوجی بات چیت آج ہو رہی ہے

مشرقی لداخ میں حقیقی کنٹرول لائن (ایل اے سی) کے ساتھ  ساتھ ہندستان اور چین کے مابین بڑھتی کشیدگی کے درمیان دونوں ملکوں کی افواج درمیاں آج چین کی طرف واقع مولڈو میں کور کمانڈروں کی سطح پر پانچویں دور کی بات چیت ہو رہی ہے۔ ہندستانی فوج کے ذرائع نے اتوار کے روز بتایا کہ ملاقات 11 بجے شروع ہوگی۔ پچھلی بات چیت 14 جولائی کو ہوئی تھی۔ ذرائع نے بتایا کہ اس اجلاس کا ایجنڈا مشرقی لداخ میں ایل اے سی کے قریب کے علاقوں اور گوگرا سے مکمل طور پر فوجی انخلا کے لئے دباؤ ڈالنا ہوگا۔

August 02, 2020, 10:39 AM IST

دنیا کی کوئی بھی طاقت ہماری زمین پر قبضہ نہیں کر سکتی

وزیر دفاع راجناتھ سنگھ کی چین کو دبے لفظوں میں وارننگ ، ۲؍ روزہ دورے پرلداخ پہنچے ، پینگانگ جھیل کے کنارے جوانوں سے خطاب ، کہا کہ کوئی طاقت اگر ہمارے قومی وقار کو ٹھیس پہنچانے کی کوشش کریگی تو اسے منہ توڑ جواب دیا جائے گا،جوانوں کو سرحد پر ڈٹے رہنے اور دشمن کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر جواب دینے کی تلقین کی ۔

July 18, 2020, 3:30 AM IST

راجناتھ سنگھ لیہہ پہنچے، آرمڈ فورسز کی ایئر ڈراپنگ مہارتوں کا مشاہدہ کیا

مرکزی وزیر دفاع راجناتھ سنگھ جموں و کشمیر اور لداخ یونین ٹریٹریوں کے دو روزہ دورے پر جمعے کی صبح یہاں پہنچ گئے۔ بتادیں کہ وادی گلوان میں چین اور ہندوستان کے درمیان ماہ مئی سے کشیدگی شدت اختیار کرنے کے بعد یہ وزیر دفاع کا لداخ کا پہلا دورہ ہے۔ اس موقع پر چیف آف ڈیفنس اسٹاف جنرل بپن راوت اور چیف آف آرمی سٹاف جنرل منوج مکند ناروانے بھی ان کے ہمراہ ہیں۔ ذرائع کے مطابق راجناتھ سنگھ  نے اپنے دو روزہ دورے کے پہلے روز حقیقی کنٹرول لائن کی تازہ سیکورٹی صورتحال کا جائزہ لیا اور فوجی افسروں سے تازہ صورتحال کی تفصیلی بریفنگ حاصل کی۔

July 17, 2020, 12:25 PM IST

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK