Inquilab Logo

افغانستان کا مقصد سیمی فائنل میں داخلہ

Updated: June 25, 2024, 10:43 AM IST | Agency | Kingstown

آج ٹی ۲۰؍ ورلڈ کپ میں افغانستان ، بنگلہ دیش کیخلاف زیادہ فرق سے کامیابی حاصل کرنا چاہے گا۔ بنگلہ دیش بھی مقابلے کیلئے تیار۔

Afghanistan team. Photo: INN
افغانستان کی ٹیم۔ تصویر : آئی این این

 ٹی ۲۰؍ ورلڈ کپ ۲۰۲۴ء کے سپر۸؍ کے فائنل میں افغانستان کا مقابلہ بنگلہ دیش سے ہوگا۔ یہ میچ منگل کو ہندوستانی وقت کے مطابق صبح۶؍ بجے کنگس ٹاؤن کے سینٹ ونسنٹ گراؤنڈ پر ہوگا۔ گروپ۲؍کے ۲؍ سیمی فائنلز کی توثیق ہو گئی ہے، افغانستان کی آسٹریلیا کے خلاف فتح کے بعد گروپ وَن کی مساوات بھی دلچسپ ہو گئی ہے۔ آسٹریلیا جیسی ٹیم کو شکست دینے کے بعد افغان ٹیم کے اعتماد میں اضافہ ہوا ہے اور وہ بھی بنگلہ دیش کو شکست دے کر پہلی بار سیمی فائنل میں پہنچنے کی کوشش کرے گی۔ اس کے ساتھ ہی بنگلہ دیش کی ٹیم یہ میچ بڑے فرق سے جیت کر اپنے بقیہ امکانات کو زندہ رکھنا چاہے گی۔ 
ایک دوسرے کا مقابلہ 
  دونوں ٹیموں کے درمیان اب تک۱۱؍ ٹی ۲۰؍ میچ ہو چکے ہیں جن میں افغانستان نے ۶؍ جبکہ بنگلہ دیش نے ۵؍ جیتے ہیں۔ ٹی ۲۰؍ ورلڈ کپ میں دونوں ٹیمیں صرف ایک بار آمنے سامنے آئی ہیں جس میں بنگلہ دیش نے کامیابی حاصل کی۔ 
حالیہ مقابلے 
 افغانستان نے نیوزی لینڈ کے خلاف ایک بڑی جیت کےساتھ ۴؍ گروپ میچوں میں سے ۳؍ جیتے تھے۔ اس کے بعد وہ سپر۸؍ میں ہندوستان کے خلاف ہار گئے لیکن آسٹریلیا کو شکست دے کر اس نے اپنے سیمی فائنل کے امکانات کو برقرار رکھا۔ بنگلہ دیش نے اپنے ۳؍ گروپ میچ بھی جیتے تھے جن میں روایتی حریف سری لنکا کے خلاف فتح بھی شامل تھی۔ تاہم، انہیں سپر۸؍ میں ہندوستان اور آسٹریلیا دونوں سے شکست ہوئی تھی اور یہ میچ بڑے فرق سے جیتنے کے ساتھ ساتھ وہ آسٹریلیا کو بھی ہندوستان کو بڑے فرق سے ہرانا چاہیں گے۔ سینٹ ونسنٹ کے اس گراؤنڈ پر بنگلہ دیش نے ۲؍ میچ کھیلے ہیں، جس میں اس نے دونوں میں فتح حاصل کی ہے، جب کہ افغانستان نے یہاں صرف ایک میچ کھیلا ہے، جس میں اس نے آخری میچ میں ہی آسٹریلیا کو بڑے فرق سے شکست دی تھی۔ 
گرباز اور رشاد پر نظریں 
 رحمان اللہ گرباز اس ٹورنامنٹ میں ۶؍ اننگز میں ۴۰؍ کے اوسط اور۱۴۲؍ کے اسٹرائیک ریٹ سے ۲۳۸؍ رن بنا کر سب سے زیادہ رن بنانے والے کھلاڑی ہیں۔ انہوں نے اس ورلڈ کپ میں ۳؍ نصف سنچریاں اسکور کی ہیں جس میں آسٹریلیا کے خلاف۶۰؍ رن کی اہم اننگز بھی شامل ہے۔ دوسری طرف بنگلہ دیش کے لئے ان کے لیگ اسپن آل راؤنڈر رشاد حسین ایک بڑا نام بن کر ابھرے ہیں۔ اس ورلڈ کپ میں ان کا ۱۴ء۶؍ اوسط اور۱۱ء۴؍ کے اسٹرائیک ریٹ سے۱۱؍ وکٹ لئے ہیں۔ وہ گیندوں کو اسپن کرنےکیلئے مشہور ہیں اور گوگلی پر بہت کم انحصار کرتے ہیں۔ 

افغانستان: راشد خان (کپتان)، رحمان اللہ گرباز (وکٹ کیپر)، ابراہیم زدران، محمد اسحاق، عظمت اللہ عمرزئی، کریم جنت، گلبدین نائب، نجیب اللہ زدران، محمد نبی، نوین الحق، نانگیلیا خروٹی، نور احمد، فضل حق فاروقی، فرید احمد مجیب الرحمان۔

بنگلہ دیش: نظم الشانتو (کپتان)، تسکین احمد (نائب کپتان)، ذاکر علی، تنزید حسن، تنظیم حسن شکیب، تنویر اسلام، محمود اللہ، مہدی حسن، مستفیض الرحمان، رشاد حسین، لیٹن کمار داس، شکیب الحسن، شریف اسلام ، سومیا سرکار، محمد  توحید ہردوئے۔

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK