Inquilab Logo

ٹی ۲۰؍ ورلڈ کپ : جنوبی افریقہ اور انگلینڈکی ٹیموں نے سیمی فائنل میں جگہ بنائی

Updated: June 25, 2024, 10:53 AM IST | Agency | North Sound (Antigua)

جنوبی افریقہ نے ویسٹ انڈیز کو ۳؍وکٹ سے شکست دی۔ تبریز شمسی کی اچھی کارگردگی۔ انگلینڈ نے امریکہ کو ۱۰؍ وکٹ سے روند کر کامیابی حاصل کی۔ امریکہ ٹورنامنٹ سے باہر۔

Photo: INN
تصویر : آئی این این

تبریز شمسی (۳؍ وکٹ) اور دیگر گیند بازوں کی شاندار کارکردگی اور اس کے بعد ٹرسٹن اسٹبس (۲۹؍رن) اور ہینرک کلاسن (۲۲؍رن) کی اننگز کی بدولت جنوبی افریقہ نے ٹی۲۰؍ ورلڈ کپ کے سپر ایٹ گروپ دو کے بارش سے متاثرہ میچ میں ویسٹ انڈیز کو ۳؍ وکٹ سے شکست دے کر سیمی فائنل میں جگہ بنالی۔ 
 سر ویوین رچرڈس اسٹیڈیم میں جنوبی افریقہ نے ٹاس جیت کر پہلے گیندبازی کا فیصلہ کیا۔ ویسٹ انڈیز نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے جنوبی افریقہ کو ۱۳۶؍رن کا ہدف دیا تھا۔ جنوبی افریقہ کی اننگز میں بارش کی وجہ سے ڈک ورتھ لوئس رول کے تحت ۳؍ اوور کم کرکے۱۷؍ اوورس میں ۱۲۳؍ رن کا ہدف کر دیا گیا۔ جسے جنوبی افریقہ نے۱۶ء۱؍ اوور میں ۷؍ وکٹوں پر ۱۲۴؍ رن بنا کر حاصل کر لیا۔ 
 ویسٹ انڈیز نے روسٹن چیز (۵۲؍رن) کی نصف سنچری اور کائل میئرس کی (۳۵؍رن) کی اننگز کی بدولت۸؍ وکٹ پر۱۳۵؍ رن بنائے تھے۔ روسٹن نے۳۹؍ گیندوں پر۵۲؍ رن کی شاندار نصف سنچری اننگز کھیلی۔ ٹی ۲۰؍ ورلڈ کپ میں یہ ان کی پہلی اور ٹی ۲۰؍ انٹرنیشنل کریئر کی دوسری نصف سنچری ہے۔ آندرے رسل ۲۵؍رن اور الزاری جوزف نے ناٹ آؤٹ ۱۱؍ رن بنائے۔ ویسٹ انڈیز کے ۶؍ بلے باز ڈبل فیگر میں بھی نہ پہنچ سکے۔ جنوبی افریقہ کی جانب سے تبریز شمسی نے ۳؍ وکٹ حاصل کئے۔ مارکو جانسن، ایڈن مارکرم، کیشو مہاراج اور کگیسو ربادا نے ایک ایک بلے باز کو آؤٹ کیا۔ 
 ۱۳۶؍رن کے ہدف کے تعاقب میں جنوبی افریقہ کی شروعات اچھی نہیں رہی۔ دو اوورس کے بعد بارش آنے سے جنوبی افریقہ ٹیم کو۱۷؍ اوورس میں ۱۲۳؍رن کا نظرثانی ہدف ملا۔ ایک وقت جنوبی افریقہ نے۴۲؍رن کے اسکور تک اپنے ۳؍ وکٹ گنوادیئے تھے۔ ریزا ہینڈرکس صفر، کوئنٹن ڈی کاک ۱۲؍رن اور کپتان ایڈن مارکرم ۱۸؍ رن بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے۔ ٹرسٹن اسٹبس ۲۷؍ گیندوں پر ۲۹؍رن، ہینرک کلاسن ۱۰؍ گیندوں پر۲۲؍رن اور مارکو جانسن نے۱۴؍ گیندوں پر ناقابل شکست ۲۱؍رن کی اننگز کھیلی۔ جنوبی افریقہ نے۱۶ء۱؍ اوور میں ۷؍ وکٹ پر۱۲۴؍ رن بناکرمیچ ۳؍ وکٹ سے جیت لیا۔ ویسٹ انڈیز کی جانب سے روسٹن نے ۳؍ وکٹ حاصل کئے۔ آندرے رسل اور الزاری جوزف نے ۲۔ ۲؍ بلے بازوں کو آؤٹ کیا۔ اس میچ میں جنوبی افریقہ کے گیندباز تبریز شمسی نے اچھی بولنگ کی اور حریف ٹیم کے بلے بازوں کو روکے رکھا اور وکٹ لینے میں بھی کامیاب رہے۔ 
 برج ٹاؤن (ایجنسی): انگلینڈ نےکرس جارڈن کی ایک ہی اوور میں ہیٹ ٹرک (۴؍ وکٹ) اور کپتان جوس بٹلر (۸۳؍رن ) کی طوفانی اننگز کی بدولت ٹی ۲۰؍ ورلڈکپ کے سپر ایٹ گروپ۲؍ کے میچ میں امریکہ کو ریکارڈ۱۰؍ وکٹوں سے شکست دے کر سیمی فائنل میں داخلہ حاصل کرلیا۔ 
 انگلش ٹیم نے۱۱۶؍ رن کا ہدف صرف ۹ء۴؍ اوورس میں حاصل کر لیا۔ اس فتح کے ساتھ ہی دفاعی چمپئن انگلینڈ نے ٹی ۲۰؍ ورلڈ کپ کے سیمی فائنل کیلئے کوالیفائی کر لیا۔ 
 ۱۱۶؍ رن کے ہدف کے تعاقب میں انگلینڈ کی اوپننگ جوڑی فل سالٹ اور کپتان جوس بٹلر نے دھماکہ خیز انداز میں شروعات کی اور ۹ء۴؍ اوور س میں ۱۱۷؍ رن بنا کر۱۰؍ وکٹ سے میچ جیت لیا۔ فل سالٹ نے۲۱؍ گیندوں پر ۲۵؍ رن بنائے۔ جوس بٹلر نے۳۸؍ گیندوں پر ۶؍ چوکوں اور ۷؍ چھکوں کی مدد سے۸۳؍ رن کی شاندار ناٹ آؤٹ اننگز کھیلی۔ ان دونوں کی بیٹنگ کے سامنے کوئی بھی امریکی گیند باز کامیاب نہ ہو سکا۔ 
 اس سے قبل انگلینڈ نے کرس جارڈن (۴؍ وکٹ) اور دیگر گیند بازوں کی زبردست کارکردگی کی بدولت امریکہ کو۱۸ء۵؍ اوور میں ۱۱۵؍ رن پر سمیٹ دیا تھا۔ انگلینڈ کے کپتان جوس بٹلر نے ٹاس جیت کر امریکہ کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی۔ جب وہ بیٹنگ کیلئے آئے تو امریکہ کی شروعات خراب رہی۔ پہلے ہی اوور میں ریس ٹوپلے نے اینڈریاس گاس (۸) کو آؤٹ کر کے پویلین بھیج دیا۔ اس کے بعد چھٹے اوور میں سیم کیورن نے اسٹیون ٹیلر (۱۲؍رن) کو معین علی کے ہاتھوں کیچ آؤٹ کرا دیا۔ نتیش کمار (۳۰؍رن)، کپتان ایرون جونس (۱۰؍رن) عادل رشید کے ہاتھوں بولڈ ہوئے۔ کوری اینڈرسن۲۹؍رن، ہرمیت سنگھ ۲۱؍ اور ملند کمار۴؍رن بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے۔ کرس جارڈن نے صفر پر ۳؍ بلے بازوں کو آؤٹ کیا۔ امریکی ٹیم۱۸ء۵؍ اوورس میں ۱۱۵؍ رن پر ڈھیر ہوگئی۔ 
  ٹی ۲۰؍ ورلڈ کپ میں امریکہ کی سنہری مہم بھلے ہی سپر۸؍ میں رک گئی ہو اس کے باوجود اس کے بلے باز کوری اینڈرسن نے کہا کہ اس ٹورنامنٹ سے ان کی ٹیم کو بہت کچھ سیکھنے کو ملا۔ امریکہ نے ٹورنامنٹ کے پہلے راؤنڈ میں پاکستان کو شکست دی تھی اور ہندوستان کو بھی سخت چیلنج پیش کیا تھا لیکن سپر ۸؍ مرحلے میں اسے جنوبی افریقہ، ویسٹ انڈیز اور انگلینڈ سے شکست کا منہ دیکھنا پڑا تھا۔ اینڈرسن نے اتوار کو انگلینڈ کے ہاتھوں ۱۰؍ وکٹوں کی شکست کے بعد کہاکہ `آسمان کی بھی ایک حد ہوتی ہے۔ امریکی کرکٹ کے بارے میں پچھلے کچھ برسوں سے بحث چل رہی تھی۔ ہم آنے والے برسوں میں ترقی کرتے رہیں گے۔ 

متعلقہ خبریں

This website uses cookie or similar technologies, to enhance your browsing experience and provide personalised recommendations. By continuing to use our website, you agree to our Privacy Policy and Cookie Policy. OK